Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

نئی اُمید: کورونا کی تجرباتی دوا سے دو تہائی مریض صحت یاب

IMG_20190630_195052.JPG

 ایک نئی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ایک تجرباتی دوا سے کورونا وائرس کے دو تہائی انتہائی تشویشناک مریضوں کی حالت بہتر کرنے میں مدد ملی ہے۔برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق یہ دوا گیلیڈ سائنسز نامی کمپنی نے تیار کی ہے جس کا نام ‘ریمیڈیسیور’ ہے اور اسے 61 مریضوں پر آزمایا گیا ہے۔

دنیا بھر میں سائنسدان کورونا وائرس کے علاج کے لیے دوا تیار کرنے کی کوششوں میں مگن ہیں لیکن ابھی تک کوئی ویکسین یا دوا سامنے نہیں آئی۔نیو انگلینڈ جرنل آف میڈیسنز میں شائع ہونے والی تحقیق کے مصنف نے لکھا ہے کہ اس دوا سے ایک امید پیدا ہوئی ہے، تاہم انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ یہ بات ابھی حتمی نہیں ہے کہ اس دوا سے مکمل طور پر کورونا کے مریضوں کو صحت یاب کیا جاسکتا ہے کیونکہ تجربے کے لیے مریضوں کی تعداد بہت کم تھی اور اسے بڑے پیمانے پر ٹیسٹ کرنے کی ضرورت ہے۔

گیلیڈ نے گذشتہ ماہ تجربے کا آغاز کیا تھا جس کے نتائج کچھ ہفتوں کے بعد سامنے آئے ہیں۔چین اور امریکہ کے نیشنل انسیٹیوٹ آف ہیلتھ میں بھی اس دوا پر تجربات کیے جا رہے ہیں۔گیلیڈ نے اس تجربے میں امریکہ، یورپ کینیڈا اور جاپان کے مریضوں کو شامل کیا جنہیں اس دوا کا 10 روز کا کورس کروایا گیا۔