• 425
    Shares

ممبئی:مہاراشٹر کا ضلع بھنڈارا ریاست کا پہلا ایسا ضلع بن گیا ہے جہاں کورونا وائرس کا اب ایک بھی مریض موجود نہیں ہے۔ جانکاری کے مطابق جمعہ کو یہاں آخری سرگرم مریض کو بھی چھٹی دے دی گئی۔ جمعہ کو جانچ کیے گئے 578 سیمپل میں سے ایک بھی سیمپل پازیٹو نہیں ملا ہے۔ ضلع کلکٹر سندیپ کدم نے کہا کہ یہ کامیابی ضلع انتظامیہ اور محکمہ صحت کے ملازمین کی مشترکہ کوششوں اور ٹریسنگ، ٹیسٹنگ و ٹریٹمنٹ کی پالیسی کو نافذ کرنے سے حاصل ہوئی ہے۔ واضح رہے کہ ضلع میں گزشتہ سال 27 اپریل کو گردا بُدرک گاؤں میں پہلا مریض پایا گیا تھا۔

 

قابل ذکر ہے کہ رواں سال 12 اپریل کو ضلع میں سب سے زیادہ 1596 نئے معاملے سامنے آئے تھے۔ ضلع میں 18 اپریل کو سب سے زیادہ 12847 سرگرم مریض تھے۔ علاوہ ازیں 12 جولائی 2020 کو ضلع میں کورونا وائرس سے پہلی موت ہوئی تھی۔ اس کے بعد اس سال یکم مئی کو ضلع میں سب سے زیادہ 35 لوگوں کی موت درج کی گئی تھی۔ اب تک ضلع میں مجموعی طور پر 1133 مریضوں کی کورونا سے موت ہوئی ہے۔

 

ضلع کلکٹر سندیپ کدم کے ذریعہ جاری ایک پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ اس سال 18 اپریل کو سرگرم مریض کی تعداد 12847 پہنچنے کے بعد صحت مند ہونے والے مریضوں کی تعداد تیزی سے بڑھتی رہی۔ 22 اپرل کو سب سے زیادہ 1568 مریضوں کو ڈسچارج کیا گیا۔ ایک رپورٹ کے مطابق اب تک ضلع میں 449832 کورونا جانچ کرائی گئی ہے، جن میں سے 59809 سیمپل پازیٹو پائے گئے ہیں۔ پازیٹو مریضوں میں سے 58776 ٹھیک ہو چکے ہیں۔ ضلع کلکٹر نے بتایا کہ ضلع میں 9.5 لاکھ آبادی کے 40 فیصد لوگوں کو کورونا ویکسین کی پہلی خوراک دی جا چکی ہے اور 15 فیصد لوگوں کو دونوں خوراک دی جا چکی ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔