ادھوو ٹھاکرے حکومت نے مہاراشٹرا میں کورونا کے بڑھتے ہوئے مقدمات کے درمیان کئی سخت پابندیوں کا اعلان کیا ہے۔اس کے تحت 15 فیصد کی گنجائش والے سرکاری اور نجی دفاتر کھولنے کی منظوری دی گئی ہے جبکہ شادی کی تقریب میں مہمانوں کی تعداد 25 تک محدود کردی گئی ہے۔پبلک ٹرانسپورٹ کا استعمال سرکاری ملازمین ،طبی پیشہ ور افراد اور علاج کے محتاج افراد کے لئے مختص کیا گیا ہے۔ مہاراشٹرا حکومت کے اقدامات کے تحت سرکاری دفتر میں صرف 15٪ ملازمین رہ سکتے ہیں۔ صرف یہ ہی نہیں ، شادی کی تقریب میں صرف دو گھنٹے کی اجازت ہے۔ اس قانون کو توڑنے والوں کو پچاس ہزار روپے جرمانہ ادا کرنا پڑے گا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں