مہاراشٹر میں ایک بھی کورونا وائرس سے متاثر مریض نہیں ملا:وزیر صحت

ممبئی :۴؍مارچ (یو این آئی )کورونا وائرس کے دنیا بھر میں پھیلنے کی خبروں کی وجہ سے مہاراشٹر سمیت پورے ملک میں افواہوں کا بازار گرم ہے اس وجہ سے جگہ جگہ پر سرکار و انتظامیہ کی جانب سے شہریوں کو یقین دلانے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ شہری خوفزدہ نہ ہوں یہاں ایسی کوئی بات نہیں ہے البتہ صحت محکمہ نے سرکاری اسپتالوں کو الرٹ رہنے کیلئے کہا ہے ۔ وزیر صحت راجیش ٹوپے نے آج یہاں جاری بجٹ اجلاس کے دوران کوونا وائرس کے تعلق سے قانون ساز کونسل میں اپنی بات رکھتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ نہ ہو اس لئے صحت محکمہ کو بہت ہی مستعد رہنے کو کہا گیا ہے جس کیلئے ریاستی حکومت جو ضروری بات ہے اس پر اپنی نگاہیں لگا رکھی ہیں ۔


وزیر صحت نے کہا کہ ریاست میں ہر ضلع میں کورونا کے مشتبہ مریضوں کیلئے دس بیڈ الگ سے علاج کیلئے رکھے گئے ہیں ان بیڈکو کسی دوسرے مرض کے مریض کو نہیں دیا جا رہا ہے ۔ وزیر صحت نے بتایا کہ ممبئی میں تین مقام پر مرکز قائم کیئے گئے ہیں اور صحت سے متعلق ملازم اور ڈاکٹروں کو کورونا سے متاثرہ کا علاج کرنے کیلئے خصوصی ٹریننگ دی گئی ہے ۔وزیر صحت راجیش ٹوپے نے قانون ساز کونسل میں بتایا کہ کورونا وائرس بنیادی طور پر گوشت وغیرہ سے پھیلتا ہے اور کورونا وائرس کی وجہ سے مرنے والوں کی تعداد ڈھائی سے تین فیصد کا ہے اور اگر علامت وقت پر سمجھ میں آ جائے تو اس کا علاج پوری طرح سے ممکن ہے ۔


انہوں نے کہا کہ ڈرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ وزیر صحت نے بتایا کہ این ۹۵؍ماسک صرف اسپتال میں کام کر رہے ملازمین اور ڈاکٹروں کیلئے ہی ہے عام لوگوں کو اس کی ضرورت نہیں ہے ۔ قانون ساز کونسل میں اپنی بات رکھتے ہوئے وزیر صحت راجیش ٹوپے نے عوام سے اپیل کی کہ مہاراشٹر میں ایک بھی مریض کورونا وائرس سے متاثر نہیں پایا گیا ہے اس لئے شہری بالکل خوفزدہ نہ ہوں اور کسی بھی افواہ پر دھیان نہ دیں ۔