مہاراشٹر : جالنہ کے کاروباریوں پر انکم ٹیکس کا چھاپے : 390 کروڑ روپے کے اثاثے ضبط : ویڈیو دیکھیں

3,497
ضبط کیے گئے اثاثوں میں 56 کروڑ روپے نقد اور 32 کلو سونا، موتی اور ہیرے شامل ہیں جن کی مالیت 14 کروڑ روپے ہے۔ اہلکاروں نے چھاپوں کے دوران جائیداد کے کچھ دستاویزات اور ڈیجیٹل ڈیٹا بھی برآمد کیا۔

جالنہ: (ورق تازہ نیوز) حکام نے بتایا ہے کہ ٹیکس چوری کے سلسلے میں مہاراشٹر کے جالنہ میں کچھ کاروباری گروپوں سے منسلک متعدد مقامات پر چھاپوں کے دوران محکمہ انکم ٹیکس نے تقریباً 390 کروڑ روپے کی "بے نامی” جائیداد یا "بے حساب” اثاثے ضبط کیے ہیں۔ضبط کیے گئے اثاثوں میں 56 کروڑ روپے نقد اور 32 کلو گرام سونا، موتی اور ہیرے شامل ہیں جن کی مالیت 14 کروڑ روپے ہے۔ اہلکاروں نے چھاپوں کے دوران جائیداد کے کچھ دستاویزات اور ڈیجیٹل ڈیٹا بھی برآمد کیا۔یہ چھاپے 1 اور 8 اگست کے درمیان رہائشی اور سرکاری جگہوں پر مارے گئے جو سٹیل، کپڑوں اور رئیل اسٹیٹ کا کاروبار کرنے والے دو کاروباری گروپوں سے منسلک تھے۔ چھاپوں کے دوران ضبط کی گئی نقد رقم کی صحیح گنتی کرنے میں اہلکاروں کو تقریباً 13 گھنٹے لگے۔

This slideshow requires JavaScript.

ان کاروباری گروپوں کی جانب سے مبینہ ٹیکس چوری کے بارے میں اطلاعات موصول ہونے کے بعد، انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ نے تلاشی آپریشن کے لیے ریاست بھر سے 260 اہلکاروں پر مشتمل پانچ ٹیمیں تشکیل دی تھیں۔

اس کارروائی میں ریاست بھر سے محکمہ انکم ٹیکس کے 260 سے زیادہ افسران اور ملازمین نے حصہ لیا۔ افسران کو پانچ ٹیموں میں تقسیم کیا گیا تھا۔ محکمہ انکم ٹیکس نے چھاپوں کے دوران 120 سے زائد گاڑیوں کا استعمال کیا۔ محکمہ کو جالنا کی چار اسٹیل کمپنیوں کے لین دین میں بے ضابطگی کی اطلاع ملی تھی جس کے بعد محکمہ کی ٹیم حرکت میں آئی۔ محکمہ انکم ٹیکس نے ملزمان کے گھر اور فیکٹریوں پر چھاپہ مارا۔بتایا جا رہا ہے کہ یہ کارروائی گزشتہ چار پانچ روز سے خفیہ طور پر جاری تھی اور دو اسٹیل کمپنیوں پر چھاپے مارے گئے، ان کے نام کالیکا اسٹیل اور سائی رام اسٹیل بتائے جا رہے ہیں۔ کالیکا اسٹیل کے مالک کا نام گھنشیام گوئل بتایا جا رہا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ محکمہ انکم ٹیکس نے اس کارروائی میں مقامی پولیس کی کوئی مدد نہیں لی۔