ممبئی :۔(محمدیوسف رانا)آل انڈیا خلافت کمیٹی سے نکلنے والے عیدمیلادالنبی ؐکے جلوس کو مشروط طور پر نکالنے کی اجازت دی نیزکسی ایک جگہ پر بھیڑ نہ اکٹھا کرنے کیلئے پورے مہاراشٹر میں اپنے اپنے علاقوں میں پانچ ٹرکوں اور ہر ٹرک پر پانچ لوگوں کے ساتھ نکالنے کی اجازت دے دی تفصیلات کے مطابق عید میلادالنبی ﷺ کے موقع پر ۱۹؍اکتوبر بروز منگل کو آل انڈیا خلافت کمیٹی کی جانب سے نکلنے والے جلوس کی تیاریوںکے سلسلے میں کمیٹی کے چیئرمین سرفراز آرزو و دیگر اہم شخصیات کی کوششوں کو اس وقت کامیابی ملی جب مہاراشٹر سرکار نے آل انڈیا خلافت کمیٹی کے ذریعے نکلنے والے جلوس کو مشروط طور پر تو اجازت دے ہی دی .

اسی کے ساتھ حکومت نے ممبئی ،ملاڈ،کرلا، اندھیری، باندرہ، گھاٹکوپر، وکرولی، ممبرا، تھانہ، بھیونڈی، ناشک، مالیگاوں، دھولیہ، کولہاپور، شولاپور، اچل کرنجی، ناگپور، ایوت محل، جلگاوں،واشم، بارہ متی، اورنگ آباد، جالنہ، پربھنی، بیڑ، ناندیڑ کے علاوہ پوری ریاست میں مسلم آبادی والےعلاقوں میں عید میلادالنبی ﷺکا جلوس نکالنے کی اجازت دے دی اور مہاراشٹر حکومت نے اپنی گائیڈلائن میں کہا ہے کہ جس طرح آل انڈیا خلافت کمیٹی کو ۵؍ٹرک جس میں ہر ٹرک پر پانچ لوگوں کے ساتھ جلوس نکالنے کی اجازت دے دی اس کے علاوہ اب یہاں بھیڑ نہ ہو اس لئے پورے شہر میں مختلف مقامات سے لوگ اپنے اپنے علاقوں میں پانچ ٹرکوں کے ساتھ جلوس عید میلادالنبی ﷺکا جلوس نکال سکیں گے ۔

مہاراشٹر حکومت کی گائیڈ لائن میں کہا گیا ہے کہ بھیڑ کو قابو میں کرنے کیلئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے اور یہ بات صاف ہونی چاہیئے کہ اب اگر لوگ ورلی میں رہتے ہیں یا ماہم میں رہتے ہیں یا پھر سائن ، گھاٹکوپر میں رہتے ہیں تو وہ اپنے اپنے علاقوں میں ہی جلوس عیدمیلادالنبی ﷺ کو مذکورہ گائیڈلائن کی پاسداری کرتے ہوئے وہیں سے جلوس نکالیں ۔منگل کو نکلنے والے خلافت ہاوس کاتاریخی جلوس میں مہاراشٹر کے اقلیتی امور کے وزیر نواب ملک مہمان خصوصی کے طور پر شرکت کر رہے ہیں جبکہ جلوس کی قیادت رضااکیڈمی کے روح رواں الحاج محمد سعید نوری کریں گے ۔

عید میلادالنبی ﷺ کے جلوس کیلئے کمیٹی کے چیئرمین و ممبران کے علاوہ معین ملت جناب معین میاں ، رکن اسمبلی امین پٹیل اور رضا اکیڈمی کی کوششوں کے نتیجے میں حکومت مہاراشٹر نے نئی گائیڈلائن کے مطابق مشروط طور پر جلوس عید میلادالنبی ﷺ کو نکالنے کی اجازت دی ہے جوصرف آل انڈیا خلافت کمیٹی سے نکلنے والے جلوس تک محدود نہ ہو کر پوری ریاست میں جہاں مسلم آبادی والے علاقے ہیں یا مسلم بستیاں ہیں وہ کسی ایک جگہ جمع نہ ہو کر اپنے اپنے علاقہ میں گائیڈلائن کے مطابق جلوس کوسابقہ روایت کو برقراررکھتے ہوئے شاندار طریقے سے نکالیں ۔اس کے ساتھ ہی جلوس کے استقبال کیلئے جو اسٹیج راستوں میں لگائے جاتے تھے ان کو بھی حسب سابق اسٹیج لگانے کی اجازت گائیڈ لائن میں شامل کی گئی ہے ۔ شرکائے جلوس اور دیگر لوگوں کیلئے جو پانی کی تقسیم ، سینی ٹائزر اور ماسک کی تقسیم کیلئے جو ٹیبل لگائے جاتے ہیں ان کو بھی اجازت دے دی گئی ہے اور لوگ اگر چاہیں تو لاوڈاسپیکر کی اجازت لیکر اس کا بھی استعمال کر سکتے ہیں ۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔