لاتور میں31مارچ تک نائٹ کرفیو،ناگپور میں 21 مارچ تک لاک ڈاؤن

ممبئی:مہاراشٹرا میں کورونا وائرس کے 16 ہزار سے زیادہ نئے کیسی نے حکومت کی پریشانیوں میں اضافہ کردیا ہے ۔ وباء پر قابو پانے کیلئے حکومت کی جانب سے مختلف اقدامات کئے جارہے ہیں۔لاتور میں نائٹ کرفیو نافذ کردیا گیا ہے۔ مہاراشٹرا میں اتوار کو کورونا وائرس کے نئے معاملات میں بڑا اضافہ درج کیا گیا ہے۔ مہاراشٹرا میں کورونا وائرس کے 16620 نئے کیسیز سامنے آئے ہیں جو کہ گزشتہ کچھ مہینوں میں سب سے زیادہ ہیں۔ ریاست میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 50 لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ وہیں 8861 لوگوں کو اسپتال سے چھٹی بھی دیدی گئی ہے۔مہاراشٹرا میں اب تک کورونا وائرس کے 23 لاکھ 14 ہزار 413 معاملات سامنے آئے ہیں۔ وہیں اب تک 21 لاکھ 34 ہزار 72 لوگ شفایاب ہوچکے ہیں۔ مہاراشٹرا میں کورونا وائرس سے 52 ہزار 861 لوگوں کی موت بھی ہوچکی ہے۔ وہیں مہاراشٹرا میں ایکٹیو معاملات کی تعداد ایک لاکھ 26 ہزار 231 تک پہنچ گئی ہے۔ریاست میں بڑھتے معاملات کو دیکھتے ہوئے لاتور میں 31 مارچ تک نائٹ کرفیو لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ لاتور میں رات 8 بجے سے لے کر صبح 5 بجے تک کرفیو رہے گا۔ اس کے علاوہ ہفتہ واری بازاروں کو بھی 31 مارچ تک بند کردیا گیا ہے۔ بتادیں کہ پونے ، ناگپور ، تھانے اور ممبئی میں سب سے زیادہ نئے معاملات سامنے آرہے ہیں۔ناگپور میں 15 مارچ سے 21 مارچ تک لاک ڈاون لگایا گیا ہے۔ وہیں پونے میں 31 مارچ تک اسکول بند رہیں گے۔آکولہ ، پربھنی میں پھر لاک ڈاون لگایا گیا ہے۔ دہلی این سی سی آ ر ، گوا ، گجرات ، کیرالہ اور راجستھان سے مہاراشٹرا میں داخل ہونے کیلئے کورونا کی منفی رپورٹ ضروری ہے۔ ملک بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس (کووڈ 19) وبا کے آٹھ ہزار سے زیادہ سرگرم معاملوں کا اضافہ ہوا ہے، جبکہ اس بیماری سے 16 ہزار سے زیادہ افراد شفایاب ہوئے ہیں گزشتہ دنوں ملک میں 8522 فعال معاملوں کا اضافہ ہوا ہے جبکہ اس بیماری سے 16637 مریض صحت یاب ہوئے ہیں۔


اپنی رائے یہاں لکھیں