ممبئی ۔ مہاراشٹرا نونرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے نے آج کہا کہ مہاراشٹرا میں کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلاو کیلئے مائیگرنٹ ورکرس ذمہ دار ہیں انہوں نے کہا کہ ان مائیگرنٹ ورکرس کا جن ریاستوں سے تعلق ہے وہاں ان کے معائنوں کیلئے مناسب سہولیات دستیاب نہں ہیں۔ مہاراشٹرا ایک صنعتی ریاست ہے جہاں دوسری ریاستوں سے کثیر تعداد میں لوگ آتے ہیں۔ جن مقامات سے یہ ورکرس آتے ہیں وہاں سہولیات کا فقدان ہے ۔ گذشتہ سال لاک ڈاون میں ہی انہوں نے تجویز کیا تھا کہ اپنے آبائی مقامات کو واپس ہونے والے ورکرس کے معائنے کئے جائیں لیکن ایسا نہیں کیا ۔ راج ٹھاکرے نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر سے اپیل کی ہے کہ وہ اسپورٹس شخصیتوں کو پریکٹس کی اور جمنازیم کو کام کرنے کی اجازت دی جائے اور یہاںسماجی فاصلے کو یقینی بنایا جائے ۔ مہاراشٹرا میں نئی تحدیدات سے متعلق سوال پر راج ٹھاکرے نے کہا کہ تمام دوکانوں کو دو تا تین گھنٹے کھلی رکھنے کی اجازت دی جانی چاہئے ۔ مہاراشٹرا میں حکومت نے ضروری ساز و سامان کی دوکانوں کے سواء دوسری دوکانوں مارکٹوں اور شاپنگ مالس کو بند رکھنے کی ہدایت دی ہے ۔ وہاں صرف اشیائے خورد و نوش ‘ میڈیکل شاپس وغیرہ کو کھلی رکھنے کی اجازت رہے گی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے مینوفیکچرنگ جاری رکھنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے لیکن دوکانیں بند رکھنے کو کہا ہے ۔ اگر دوکانیں بند رہیں گی جو مینوفیکچرنگ سے کیا فائدہ ہوگا ؟ ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں