Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

مکّہ مکرمہ: ملائیشین خواجہ سراکو سعودی پولیس نے خلافِ شریعت اقدام پر گرفتار کر لیا

مکہ مکرمہ: سعودی پولیس کی جانب سے ملائیشیا سے تعلق رکھنے والے معروف خواجہ سرا کو گرفتار کر لیا گیا ہے . تفصیلات کے مطابق نور سجات نامی خواجہ سرا کو سعودی پولیس نے خواتین کے لیے مخصوص احرام پہننے کی وجہ سے حرا ست میں لیا ہے .

33 سالہ نور سجات ملائیشیا میں سوشل میڈیا پر بہت مقبول ہے اور اس کے لاکھوں مداح ہیں. سعودی میڈیا کے مطابق نور سجات نامی خواجہ سرا کا اصل نام محمد سجاد قمر الزماں ہے. جو عمرہ کی سعادت حاصل کرنے کی خاطر سعودی عرب گئے.

حالانکہ انہوں نے اپنے پاسپورٹ اور دیگر شناختی دستاویزات میں بھی اپنی جنس مرد ظاہر کی تھی مگر حرم شریف اور مسجد نبوی میں انہوں نے شناختی دستاویزات کے برعکس خواتین کا احرام پہن رکھا تھا اور انہوں نے اسی طرح عمرہ کی ادائیگی اور پھر سوشل میڈیا پر بھی خواتین کے احرام میں ملبوس اپنی تصاویر پوسٹ کیں۔جس پر ملائیشیا کے عوام کی جانب سے بھی شدید ردِعمل سامنے آیا. سعودی حکومت کی جانب سے بھی اس معاملے پر نوٹس لیا گیا ، جس کے بعد نور سجات کو گرفتار کر لیا گیا.

نور سجات کی اس حرکت پر ملائیشیا کے وزیر برائے مذہبی امور کے وزیرنے بھی شدید غم و غصے کا اظہار کیا ہے. اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ نور سجات ایک متنازعہ شخصیت ہیں ، تاہم انہیں مذہبی معاملات میں ایک خلافِ قانون اور خلافِ شریعت متنازعہ اقدام سے گریز کرنا چاہیے تھے. انہوں نے نہ صرف ایک غلط کام کیا بلکہ اپنے اس غلط فعل کی سوشل میڈیا پر بھی خوب تشہیر کی. جس سے ملائیشین عوام کو شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا ہے. نور کی اس متنازعہ حرکت سے ملائیشیا اور سعودی مملکت کے آپسی تعلقات میں بھی بگاڑ پیدا ہو سکتا ہے. واضح رہے کہ نور سجات کے انسٹاگرام پر 15 لاکھ سے زائد فالوورز ہیں .جو ان کی پوسٹ کے بے صبری سے منتظر رہتے ہیں۔

(بہ شکریہ :قدرت روزنامہ)