مودی کو”گجرات کاقصاب“کہنے پر بی جے پی قائدین چراغ پا

608

نئی دہلی: بی جے پی نے آج پاکستان کے بلاول بھٹوکے وزیراعظم نریندرمودی کے خلاف قابل اعتراض تبصروں پر انہیں نشانہئ تنقید بنایا اور کہاکہ پڑوسی ملک کے وزیرخارجہ ایک ”اخلاقی،دانشورانہ حیثیت سے اورمالی حیثیت سے دیوالیہ ملک“ کی نمائندگی کرتے ہیں جس کی دہشت گردی کو تائید کی وجہ سے دنیا میں کوئی ساکھ نہیں ہے۔

مرکزی وزیرانوراگ ٹھاکرنے کہاکہ شائدبلاول بھٹوکاتبصرہ آج ہی کے دن ہندوستان کے ہاتھوں پاکستان کوہونے والے نقصان کے درد کانتیجہ ہے۔وہ1971کی جنگ میں پاکستان کے خلاف ہندوستان کی جیت کاحوالہ دے رہے تھے۔انہوں نے کہاکہ بلاول بھٹوکاتبصرہ انتہائی مذموماورشرمناک ہے۔ انہوں نے نامہ نگاروں کوبتایاکہ شاید یہ آج ہی کے دن ہندوستان کے ہاتھوں پاکستان کوہونے والے نقصان کا نتیجہ ہے۔ ان کے نانا اس شکست کے بعد سب کے سامنے روپڑے تھے۔اس کے باوجود پاکستان کی سرزمین مسلسل دہشت گردوں کوتحفظ فراہم کرنے کی کوشش کررہی ہے۔چاہے وہ جموں وکشمیر میں ہویا ہندوستان کے مختلف حصوں میں۔

یہ بات دنیا سے چھپی ہوئی نہیں ہے۔مودی کو”گجرات کاقصاب“ کہنے پربلاول بھٹوکونشانہئ تنقید بناتے ہوئے مرکزی مملکتی وزیر خارجہ میناکشی لیکھی نے کہاکہ پاکستان سے اورکیاتوقع کی جاسکتی ہے کیونکہ ان لوگوں نے بلوچستان میں لوگوں کو قتل کیاہے۔ انہوں نے کہاکہ عام طورپرکسی خودمختارملک کی وزارت خارجہ اس اندازمیں بات نہیں کرتی لیکن یہ پاکستان ہے۔آپ ان سے اورکیاتوقع رکھ سکتے ہیں۔ یہ وہی لوگ ہیں جنہوں نے بلوچستان میں اورکشمیرمیں عوام کاقتل کیاہے۔ یہ پنجاب کے قصاب ہیں۔یہ لوگ کراچی کے قصاب ہیں۔

بی جے پی کے محکمہ امورخارجہ کے سربراہ وجئے چوتھائی والے نے کہاکہ پاکستان میں بھی کوئی بھٹوکے تبصروں کوسنجیدگی سے نہیں لیتا۔ وہ پاکستان کے”پپو“ہیں اوررہیں گے۔انہوں نے کہاکہ بھٹوکے تبصرے قابل مذمت ہیں۔ دنیاکے اسٹیج پران کی کوئی ساکھ نہیں ہے اوران سے کسی بہترچیزکی توقع نہیں رکھی جاسکتی۔