امریکہ کے نئے ڈیفنس سکریٹری اور وزیر دفاع راجناتھ سنگھ کے درمیان ٹیلیفون پر بات چیت
نئی دہلی : وزیراعظم نریندر مودی اور امریکی صدر جوبائیڈن حکومتوں کے درمیان پہلا سرکاری رابطہ قائم ہوا ہے ۔ آج وزیر دفاع راجناتھ سنگھ اور امریکہ کے نئے ڈیفنس سکریٹری لویڈ آسٹین نے فون پر بات چیت کی ۔ یہ بات چیت شام 7.30 سے شروع ہوئی اور تقریباً 20 منٹ تک جاری رہی ۔ امریکہ کی جانب سے کئے گئے ٹیلیفون کال کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ دونوں ملکوں نے انڈوپیسیفک ویژن کو آگے بڑھانے سے اتفاق کیا ہے ۔ ہند۔امریکی دفاعی تعاون کو بھی مضبوط بنانے اپنے عہد کا اعادہ کیا ۔ دونوں وزیر دفاع اور ڈیفنس سکریٹری نے باہمی علاقائی اور عالمی مسائل پر بات چیت کی ۔ راجناتھ سنگھ نے ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ میں نے اپنے امریکی ہم منصب ڈیفنس سکریٹری لوئیڈ آسٹین سے بات چیت کی ہے اور ان کے حلف لینے پر اپنی جانب سے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے ۔ ہم دونوں نے ہند۔ امریکی دفاعی تعاون کو مضبوط بنانے کا عہد کیا ۔ حقیقت یہ ہے کہ امریکہ اپنی طرف سے ہندوستان کے ساتھ بہتر تعلقات کو فروغ دینا چاہتا ہے ۔ دونوں ملکوں کے درمیان کوئی خاص تبدیلی نہیں آئی ہے ۔ اقتدار کی تبدیلی کے بعد واشنگٹن نے ہندوستان کے تعلق سے وہی پالیسی برقرار ہے ۔ دونوں قائدین نے اپنی بات چیت کے دوران چین کے تعلق سے بھی تبادلہ خیال کیا ۔ امریکی ڈیفنس سکریٹری کی سینیٹ کی جانب سے توثیق کے چند دن بعد آسٹین نے راجناتھ سنگھ سے بات چیت کی ہے ۔ انہوں نے برطانیہ ، کینیڈا ، آسٹریلیا ، جنوبی کوریا ، جاپان کے ہم منصبوں اور ناٹو کے سربراہ سے بھی بات چیت کی ہے ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں