موجودہ حالات میں نماز جمعہ کے سلسلے میں چند ہدایات

معزز احباب و ذمہ داران مساجد : السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

آج لاکھوں لوگ(COVID-19) کرونا وائرس سے شدید متاثر ہیں ،دن بدن اضافہ اور بیماری کی شدت سے کتنے ہزار لوگ اس بیماری سے ہلاک ہو چکے ہیں سوچو! ایک وائرس سے دنیا ہل چکی ہے. معیشتیں تباہ ہو رہی ہیں. نت نئی تدابیر کا جنم ہو رہا ہے. دنیا ڈری ہوئی ہے. ماحول پر ایک عجیب سا سناٹا ہے. لوگ حیران و ششدر ہیں اور خوف و دہشت کے ماحول میں سانس لے رہے ہیں. غور کرو!*
*اسے ہلکے میں نہ لیں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے پشین گوئی فرمائی تھی

♨️Join Our Whatsapp 🪀 Group For Latest News on WhatsApp 🪀 ➡️Click here to Join♨️

*حَدَّثَنَا الْحُمَيْدِيُّ ، حَدَّثَنَا الْوَلِيدُ بْنُ مُسْلِمٍ ، حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ الْعَلَاءِ بْنِ زَبْرٍ ، قَالَ : سَمِعْتُ بُسْرَ بْنَ عُبَيْدِ اللَّهِ ، أَنَّهُ سَمِعَ أَبَا إِدْرِيسَ ، قَالَ :سَمِعْتُ عَوْفَ بْنَ مَالِكٍ ، قَالَ : أَتَيْتُ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فِي غَزْوَةِ تَبُوكَ وَهُوَ فِي قُبَّةٍ مِنْ أَدَمٍ ، فَقَالَ : اعْدُدْ سِتًّا بَيْنَ يَدَيِ السَّاعَةِ مَوْتِي ، ثُمَّ فَتْحُ بَيْتِ الْمَقْدِسِ ، ثُمَّ مُوتَانٌ يَأْخُذُ فِيكُمْ كَقُعَاصِ الْغَنَمِ.. الحدیث)*

*غزوہ تبوک کے موقع پر نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا، کہ قیامت کی چھ نشانیاں شمار کر لو، میری موت، پھر بیت المقدس کی فتح، *پھر ایک وبا جو تم میں شدت سے پھیلے گی* *جیسے بکریوں میں طاعون پھیل جاتا ہے*
*[صحیح بخاری حدیث نمبر 3176]*

*اس لئے آپ تمام لوگوں سے دردمندانہ اپیل ہے کہ آپ لوگ برائے کرم اللہ کی اس آزمائش/عذاب کا مذاق نہ بنائیں!*
*لہذا قائدین و عمائدین ملت ،علمائے کرام و ذمہ داران مساجد سے میں التماس کرتا ہوں کہ موجودہ حالات میں کرونا وائرس جیسی مہلک بیماری کے خطرہ سے خود بچیں اور دوسرے لوگوں کو بھی بچانے کی کوشش کریں ۔جب تک پورے ملک میں لاک ڈاؤن اور کرفیو نافذ ہے حکومتی احکامات اور ماہرین اطباء کی تدابیر پر عمل و پابندی کریں تاکہ لوگوں کے صحت کی حفاظت ہو سکے ،ان کی صحت اور ان کی جانوں سے کھلواڑ نہ ہو سکے ،اور لوگوں کی جانوں کو اس نازک گھڑی میں ناگہانی حادثوں سے بچایا جا سکے۔*
*چند ہدایات یہ ہیں:*

*(1) کورونا وائرس اور ملک میں لوک ڈاؤن کے پیش نظر جمعہ کے دن حسب معمول اذان دی جائے اور جمعہ کی نماز کے بجائے ظہر کی نماز اپنے اہل خانہ کے ساتھ گھروں میں پڑھیں مزید اعمال صالحہ کا اہتمام کرتے رہیں ۔*

یہ بھی پڑھیں:  محنت کا صلہ اہل خیانت سے نہ مانگو

*(2) مساجد میں صرف امام و مؤذن صاحبان یا ایک دو لوگ عملہ جو مسجد میں قیام پذیر ہیں وہی لوگ نماز ظہر میں مسجد میں رہیں اور یہ اعلان کردیں کہ لوگ اپنے گھروں 🏠 میں ہی نماز پڑھیں ۔*

*(3) لوگوں سے میل جول سے پرہیز کریں ،حالات ساز گار ہونے تک جمعہ کے لیے مساجد میں بالکل نہ جمع ہوں ۔*
*(4) گھروں میں اللہ تعالیٰ سے ذکر واذکار کریں،توبہ و استغفار کا اہتمام کریں،جمعہ کے دن سورۃ کھف کی تلاوت کا بھی اہتمام کریں ،رو رو کر اللہ سے کچھ مانگیں ۔ظہر کی فرض نماز کی جو چار رکعتیں ہیں ان کی ادائیگی میں سستی نہ کریں اور فرض نماز کی ادائیگی سے پہلے چار رکعت سنت اور فرض نماز کی ادائیگی کے بعد دو رکعت سنت مؤکدہ کا بھی اہتمام کریں ۔*

*(5)* *ہر مصیبت اور پریشانیوں کو دور کرنے والا صرف اللہ تعالی ہے جب ایوب علیہ السلام کو بیماری لاحق ہوئ تو انہوں نے اللہ تعالی سے دعا کی” وَاَيُّوْبَ اِذْ نَادٰي رَبَّهُ اَنِّىْ مَسَّنِيَ الضُّرُّ وَاَنْتَ اَرْحَمُ الرّٰحِمِيْنَ”(انبیاء:۸۳)*
*دعا کرنے کی وجہ سے اللہ تعالی نے حضرت ایوب علیہ السلام سے بیماری کو دور فرما دیا.*
*اس آیت کریمہ سے ہمیں معلوم ہوا کہ جب بھی ہمیں کوئ مصیبت لاحق ہوں تو سب سے پہلے ہم اپنے رب کی طرف رجوع کریں کیونکہ وہی مشکل کشا،دعاؤں کا سننے والا اور اپنے بندوں پر رحم کرنے والا ہے*
*اللہ تعالیٰ سے بکثرت دعا کریں کہ اللہ تعالیٰ ہم سب کو اس مہلک بیماری سے بچائے اور موذی بیماریوں سے بچنے والی دعاؤں کے پڑھنے کا بھی اہتمام کریں۔*

*1- جب بھی گھر سے باہر نکلیں یہ ذکر ضرور پڑھیں:*
*بسم الله توكلت على الله لا حول ولا قوة إلا بالله*
*فائدہ:* *ہر نقصاندہ چیز سے آپ کی کفایت اور حفاظت ہوگی۔*
*(سنن ترمذی:3426)*

*2- جہاں بھی جائیں وہاں پہنچنے کے بعد یہ دعا ضرور پڑھیں:*
*أعوذ بكلمات الله التامات من شر ما خلق*
*فائدہ:* *جب تک اس جگہ پر رہیں گے تب تک کوئی چیز نقصان نہیں پہنچائےگی۔*
*(صحیح مسلم:2708)*

*3- ہر صبح اور شام تین تین بار یہ ذکر ضرور پڑھیں:*
*بسم الله الذي لا يضر مع اسمه شيء في الأرض ولا في السماء وهو السميع العليم*
*فائدہ:* *صبح سے شام تک اور شام سے صبح تک ہر بلا سے محفوظ رہیں گے۔*
*(سنن ابی داود:5088)*

یہ بھی پڑھیں:  تجزیہ خبر: آئندہ پارلیمانی انتخابات : مسلمانوں کا دوست کون۔۔۔۔؟؟؟

*4* *اَللّٰهُمَّ عَافِنِيْ فِيْ بَدَنِيْ، اَللّٰهُمَّ عَافِنِيْ فِيْ سَمْعِيْ، اَللّٰهُمَّ عَافِنِيْ فِيْ بَصَرِيْ لَآ إِلٰهَ إِلَّا أَنْتَ۔*
*[سنن ابو داؤد :: 5090]*

*05* *اَللّٰهُمَّ إِنِّيْ أَعُوْذُ بِكَ مِنَ الْبَرَصِ وَالْجُنُوْنِ وَالْجُذَامِ وَمِنْ سَيِّئْ الْأَسْقَامِ*
*[سنن ابو داؤد :: 1554]*

*06* *أَعُوْذُ بِکَلِمَاتِ اللّٰهِ التَّامَّةِ مِنْ کُلِّ شَيْطَانٍ وَهَامَّةٍ وَمِنْ کُلِّ عَيْنٍ لَامَّةٍ۔*
*[صحیح بخاری :: 3371]*

*(6) بلا شدید ضرورت(دوا و غذا ) کے خود گھر سے نہ نکلیں اور نہ ہی اپنے گھر کے بچوں کو باہر جانے دیں ،اس وبا کی روک تھام کے لیے کوشش کریں ،اجتماعات سے بچیں ،مسجدوں ،مندروں اور گرجا گھروں میں لوگوں کو جمع ہونے سے ضرور روکیں۔*
*(7) صفائی کا بہت زیادہ اہتمام کریں ،اور سماجی اختلاط اور بھیڑ بھاڑ کی جگہ سے بچیں کیونکہ ایسا نہ بچنے سے یہ بیماری بڑھتی اور پھیلتی رہتی ہے ۔جس کے متعلق نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا تھا: *،،الطهور شطر الإيمان،،*
*صفائی آدھا نصف ایمان ہے ۔*
*اور یہ بات یاد رہے کہ*
*صفائی سے محض جسمانی یا ظاہری نظافت و صفائی مطلوب نہیں*
*بلکہ اس کا مطلب ہے کہ *جملہ شرک و بدعات اور حرام کاریوں وحرام خوریوں* سے اجتناب کیا جائے.!!
*اور ساتھ ہی ساتھ جسموں اور گھروں کی بھی مکمل صفائی رکھیں۔۔*
*اور اپنے شب و روز کو مسنون دعاؤں سے معطر رکھیں!!*
*”اللهم إني أعوذ بك مِن البرصِ والجُنونِ والجُذامِ ومِن سيّء الأسقام_”*
*
*(8)* *اللہ تعالیٰ پر قوی توکل اور تقدیر پر مکمل ایمان واعتقاد رکھیں اور ایسے موقع پر شرعی و طبی ہر اعتبار سے احتیاطی تدابیر اور حفاظتی اقدامات اختیار کریں اللہ پر بھروسہ اور توکل مصیبتوں سے نجات کا ایک اہم ذریعہ ہے کیونکہ اللہ تعالی قرآن مجید کے اندر فرمایا: "وَمَن يَتَوَكَّلْ عَلَى اللَّهِ فَهُوَ حَسْبُهُ”*
*یعنی جو شخص اللہ پر بھروسہ کرے گا اللہ اس کے لیے کافی ہوگا کیونکہ اللہ پر بھروسہ کرنا ایمان کا ایک حصہ ہے اللہ کا فرمان ہے: "وعلی اللہ فتوکلوا ان کنتم مؤمنین” (المائدہ :۲۳)*
*جب حضرت ابراھیم علیہ السلام کو آگ میں ڈالا گیا تو انہوں نے یہ دعا کہی تھی "حسبنا اللہ ونعم الوکیل”۔ تو اللہ تعالی نے انہیں آگ سے نجات دی۔*
*(9) صحت اللہ تعالیٰ کی عظیم نعمت ہے ،اپنے ہاتھوں کو ہلاکت میں نہ ڈالیں (سورۃ البقرہ 190:02) اس پابندی کو حکومت اور اس کی انتظامیہ کا احسان مانتے ہوئے اسے تسلیم کریں ۔*
*(10) کرفیو کے دوران کمزور و مفلوک الحال قسم کے لوگوں کی صدقات و خیرات کے ذریعے مالی امداد کریں ،اہل خیر حضرات اس معاملے میں آگے آئیں اور مزید تشہیر سے بچیں ،21 دن کے لئے جو کرفیو بڑھایا گیا ہے، بہت سارے لوگوں کی بھکمری کا ذریعہ ہوچکا ہے، کیونکہ بہت سارے لوگ روز کماتے روز کھاتے ہیں، راشن بھی شہروں میں زیادہ سے زیادہ ایک ماہ کا رکھتے ہیں، ابھی سے مارکیٹ میں سامان کی قلت ہونے کے ساتھ ساتھ ریٹ بھی پروان چڑھنے لگا ہےمزید ایام گزرتے ہی مزید اضافہ کی قوی امید ہے۔*
*(11) غلط طور پر جو لوگ آپ کے جذبات سے کھیلنے کی کوشش کریں آپ انھیں سنجیدگی سے سمجھائیں۔*
*(12) مصیبت کے وقت اذان دینا،روزہ رکھنا،اجتماعی ذکر کرنا،بال بھیگو کر پینا یہ سب صحیح نہیں ہے ان سب سے خود بھی رکیں اور دوسروں کو بھی ضرور روکیں ۔*

یہ بھی پڑھیں:  کروناوائرس اور خیرِ امت - از: اسانغنی مشتاق احمد رفیقیؔ

*(13) بلا اختلاف تمام مسالک و مذاھب کے پیش نظر تمام مساجد کے متولیان اپنے یہاں مسجد کے بجائے گھر پر ظہر کی نماز پڑھیں اور اپنی صحت وسلامتی کی فکر کریں ۔*
*(14) نوجوانو! اپنے آپ کواپنے گھروں میں صرف 21دنوں کے لیے بندکردیجے نمازکی پابندی وذکرواذکاروقران کی تلاوت وتوبہ استغفار کے ساتھ ان شاءاللہ، اللہ کی مددضرورآئے گی اور یہ وبا ختم ہو جائے گی ان شاء اللہ جلد ۔*

*(15)‏حالیہ دنوں میں سب سے افضل کام جو کیے جا سکتے ہیں وہ یہ ہیں کہ اس حدیث پر عمل کر لیا جائے جبکہ اللہ کے نبی ﷺ سے دریافت کیا گیا: نجات کس چیز میں ہے؟*
*تو آپ ﷺ نے فرمایا:*

*‏١- أمسك عليك لسانك "اپنی زبان کو قابو میں رکھو”*
*( افواہوں پر دھیان مت دو)*

*‏٢- وليسعك بيتك "اپنے گھر کو لازم پکڑو”*
*(گھر میں ٹھہرے رہو)*

*‏٣- وابْكِ على خطيئتك "اور اپنے گناہوں پر رویا کرو”*
*(بکثرت توبہ و استغفار اور دعا کرتے رہو )*
*(صحيح الترمذي:2406)*

*اس وقت کرونا وائرس کا خطرہ کافی ہے ان تمام ہدایات پر عمل انتہائی ضروری ہے تاکہ اس منتشر وبا سے بچا جاسکے ۔*

*اللہ تعالیٰ ہم تمام اہل وطن کو جلد از جلد ان جملہ وباؤں و بلاؤں اور آزمائشوں و آفتوں سے نجات دے اور ہر طرح کی بیماریوں سے اپنے حفظ و امان میں رکھے اور دین کی صحیح سمجھ اور اس پر عمل کی توفیق دے (آمین)*

افروز عالم ذکر اللہ سلفی،گلری،ممبئی

*afrozgulri@gmail.com*
7379499848*
*27/03/2020*

WARAQU-E-TAZA ONLINE

I am Editor of Urdu Daily Waraqu-E-Taza Nanded Maharashtra Having Experience of more than 20 years in journalism and news reporting. You can contact me via e-mail waraquetazadaily@yahoo.co.in or use facebook button to follow me