Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

موبائل چارج کرتے وقت اگر آپ بھی یہ 8 غلطیاں کرتے ہیں تو فوراً رک جائیں

یقیناً آپ یہ نہیں جانتے ہوں گے کہ جس طرح سے آپ اپنے فون کو چارج کرتے ہیں وہ نہ صرف آپ کے بجلی کے بل میں اضافے کا سبب بنتا ہے بلکہ موبائل کی بیٹری کی عمر کو کم کرنے میں بھی اہم ہو سکتا ہے۔ آج کل استعمال ہونے والی فون کی بیٹریاں ایک خاص چارجنگ سائیکل سسٹم پر مشتمل ہوتی ہیں جو کہ طویل وقت انہیں کارآمد بناتا ہے- ہماری ویب آپ کے ساتھ اپنے فون کو چارج کرنے کے صحیح طریقہ کے بارے میں کچھ نکات بانٹنا چاہتی ہے، تاکہ آپ اسے بہترین طریقے سے استعمال کرسکیں اور کسی بھی قسم کے خطرات سے بچ سکیں۔

بجلی کے ساکٹ
چارجر مسلسل اس وقت بھی توانائی خرچ کر رہا ہوتا ہے جب وہ بجلی کے ساکٹ میں ہو چاہے اس کے ساتھ موبائل نہ بھی منسلک ہو- اس کے علاوہ چارجر سے آہستہ آہستہ گرمائش بھی خارج ہورہی ہوتی ہے جو کسی بھی وقت آگ پکڑنے کا باعث بن سکتی ہے- اس کے علاوہ شارٹ سرکٹ بھی آگ کی وجہ بن سکتا ہے- اگر آپ چارجر استعمال نہیں کر رہے تو اسے ساکٹ سے نکال کر رکھ دیجیے-
100 فیصد چارجنگ
اگر آپ اپنے فون کی بیٹری ہر وقت 100 فیصد چارج رکھتے ہیں تو آپ اس کی زندگی کو مختصر کر رہے ہیں- درحقیقت بیٹری میں ایک چارجنگ سائیکل سسٹم ہوتا ہے لیکن ہر وقت 100 فیصد چارجنگ کی وجہ سے یہ سائیکل سسٹم جلد ختم ہوجاتا ہے- عام اصول یہ ہے کہ بیٹری کو ماہ میں ایک بار مکمل طور پر ری چارج کریں اور دوسرے اوقات میں اس کی چارجنگ 20 فیصد سے 80 فیصد کے درمیان رکھیں۔

بیٹری کا مکمل خاتمہ
بیٹری کو 0 فیصد تک جانے دینا بھی صحیح نہیں ہے کیونکہ وجہ وہی ہے کہ ان چارجنگ سائیکل سسٹم موجود ہوتا ہے- لہٰذا اگر آپ نے بیٹری کو بالکل ختم ہونے دیا تو آپ اپنی ڈیوائس کی لمبی عمر کو مرحلہ وار ختم کردیں گے۔

ساری رات چارجنگ
ساری رات موبائل چارجنگ پر لگے رہنے سے جہاں ایک جانب بجلی خرچ ہوتی ہے وہیں دوسری طرف بیٹری بھی غیر ضروری چارج ہورہی ہوتی ہے- اس طرح بیٹری کا چارجنگ سائیکل سسٹم بھی متاثر ہوتا ہے جو کہ بیٹری کو تباہ کرنے کے لیے کافی ہے- اس کے علاوہ ساری رات چارجنگ پر چھوڑنے سے گرمائش بھی پیدا ہوتی ہے-

چارجنگ کے دوران استعمال
کبھی بھی موبائل کو چارجنگ کے دوران استعمال نہیں کرنا چاہیے کیونکہ اس سے بیٹری دباؤ کا شکار ہوتی ہے- ایسی صورت میں بیٹری کو ایک ساتھ دو کام کرنے پڑ رہے ہوتے ہیں توانائی کا ذخیرہ بھی اور اس کا اخراج بھی- اگر آپ کوئی کال بھی کرتا ہے تو پہلے موبائل کا چارجر سے رابطہ ختم کریں پھر کال اٹھائیں-

20 فیصد سے زائد پر چارجنگ
بیٹری کو مسلسل چارج کرنا بھی غلط ہے کیونکہ اسے بیٹری جلد ختم ہوتی ہے- صحیح معنوں میں بیٹری کو چارج کرنے کا وقت وہ ہوتا ہے جب آپ کی بیٹری 20 فیصد سے بھی کم رہ جائے بالخصوص 15 فیصد بیٹری باقی ہو تو چارجنگ پر لگائیں-

فون کوور میں چارجنگ
فون کیس اس وقت بیٹری کے سب سے بڑے دشمن ثابت ہوتے ہیں جب وہ فون پر موجود ہوتے ہیں اور آپ فون کو چارجنگ پر لگا دیتے ہیں- بیٹری چارجنگ کے دوران جو گرمائش خارج کر رہی ہوتی ہے وہ فون کیس کی وجہ سے باہر نہیں نکل پاتی جس سے بیٹری کے اندرونی سسٹم کو نقصان پہنچتا ہے- اس لیے جب بھی فون کو چارجنگ پر لگائیں یاد سے اس کا کیس اتار لیں-

ہم آہنگ چارجر
ہمیشہ موبائل فون کو اس کے اپنے اور معیاری چارجر سے ہی چارج کریں- کسی دوسرے برانڈ یا ماڈل کے چارجر سے چارج نہیں کرنا چاہیے- اگر آپ صحیح چارجر استعمال نہیں کرتے ہیں تو ، بیٹری میں منتقل ہونے والی توانائی کی طاقت بہت زیادہ یا بہت کم ہوسکتی ہے۔ اس سے زیادہ گرمی پیدا ہوسکتی ہے یا واقعی سست چارجنگ کا بھی سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ سب سے بہترین چارجر وہ ہے جو کمپنی کی جانب سے آپ کو فون کے ساتھ مہیا کیا گیا ہے لیکن اگر وہ استعمال کے قابل نہیں رہا تو آپ اپنے موبائل کے ماڈل کے حساب سے ہی دوسرا چارجر خریدیے-