ممبئئ 21 جون (یو این آئی ) ممبئی کو کرونا کی تیسری لہر کا خطرہ لاحق ہے اس لئے ابھی لاک ڈاؤن اور پابندیوں میں مزید نرمی یا رعایت نہیں دی جائے گی ممبئی کے شہریوں کیلئے لوکل ٹرینوں سے سفر اور بازاروں میں بھیڑ بھاڑ پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے دکانداروں کیلئے جو اصول و ضوابط جاری کئے گئے ہیں اس پر عمل آوری لازمی ہے اگر کوئی بھی کورونا اصول و ضوابط کی خلاف ورزی کرتا ہے تو اس پر کارروائی کا بھی انتباہ بی ایم سی نے دیا ہے۔

بی ا یم سی نے حکمنامہ جاری کر کے یہ واضح کیا ہے کہ ممبئی شہر میں کورونا کے مریضوں کی تعداد میں 3.79 فیصد ہے اسپتالوں میں آکسیجن کی فراہمی اور بستر 23.56 ہے لیکن اس کے باوجود ممبئی میں کورونا کا خطرہ اب بھی برقرار ہے۔ بی ایم سی نے آبادی اور اس کے تناسب کی مناسبت سے مقامی انتظامیہ کو فیصلہ کا اختیار دیا ہے لیکن ابھی ممبئی کے شہریوں کیلئے ٹرینیں شروع کرنے پر بی ایم سی متفق نہیں ہے اس لئے ممبئی کے شہریوں کے لئے ابھی ٹرین شروع ہونے کا کوئی امکان نہیں ہے جبکہ ایمرجنسی سروسیز سمیت منظور شدہ ملازمین کیلئے ٹرین سروسیز جاری رہے گی۔ ممبئی کے شہریوں کو امید تھی کہ ٹرین سروسیز جاری ہوجائیگی کیونکہ ممبئی شہر کے نواحی اور مضافاتی علاقوں کا ایک بڑا طبقہ ٹرین سے سفر کرکے اپنی منزل مقصود اور دفاتر جاتا ہے۔


ممبئی شہر میں کورونا وبا کیلئے ٹاسک فورس نے بھی یہ واضح کیا ہے کہ ابھی تیسری لہر کا خطرہ لاحق ہے اسی لئے بی ایم سی نے حفظ ماتقدم کے طور پر ممبئی بی ایم سی کے حدود کو سطح ایک کے بجائے اب تک سطح تین میں ہی رکھا ہے گوکہ ممبئی میں مریضوں کے اسپتال سے رخصتی کے بھی معاملات زیادہ ہیں اس کے باوجود بی ایم سی ابھی کوئی رعایت دینے کے موڈ میں نہیں ہے۔ ممبئی کے کئی ایسے علاقوں میں لوکل ٹرینوں سے ہی عوام سفر کرتے ہیں ان مسافروں کے سبب بھیڑ بھاڑ میں اضافہ کا خدشہ بھی ظاہر کیا گیا ہے یہ پابندیاں 21 جون سے لے کر 27 جون تک بر قرار رہے گی اس میں کوئی رعایت نہیں ہوگی یہ حکمنامہ بی ایم سی نے جاری کیا ہے درایں اثناء وزیر بازآبادکاری اور بحالی وجئے وڈیٹوار نے بھی اشارہ دیا ہے کہ ابھی ممبئی کے شہریوں کیلئے ٹرینیں شروع کرنا مشکل ہے کیونکہ اس کی اجازت نہیں دی گئی ہے انہوں نے کہا کہ کورونا پوری طرح سے قابو میں نہیں آیا ہے اور اس کے پھیلاؤ کا خطرہ بر قرار ہے جبکہ دوسری طرف ریاستی سرکار اور بی ایم سی نے حکمنامہ جاری کر کے سابقہ پابندیوں کو ہی بر قرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے اس لئے ابھی ممبئی کے شہریوں کو کچھ دنوں کا انتظار کرنا ہوگا۔ ممبئی میں ٹرینوں میں بھیڑ بھاڑ اور بازاروں میں ایک مرتبہ پھر بھیڑ بھاڑ نے بی ا یم سی کی پریشانیوں اور تشویش میں اضافہ کر دیا ہے۔ ممبئی اور مضافاتی علاقوں میں رہائش پذیر مکینوں کو اپنے دفاتر جانے میں اس لئے پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ ٹرینوں میں انہیں سفر کی اجازت نہیں ہے جبکہ بسوں میں مکمل نشستوں پر بیٹھنے کی اجازت دی گئی ہے لیکن اس کے باوجود مسافروں کو گھنٹوں قطار میں کھڑا رہنے پر مجبور ہونا پڑ رہا ہے۔ ممبئی میں دفاتر سمیت دیگر دکانوں کو اجازت دیدی گئی ہے اس کے اوقات میں بھی اضافہ کر دیا گیا ہے لیکن اس کے باوجود ٹرینوں پر پابندی برقرار رہے گی۔ حفظ ماتقدم کے طور پر سطح ایک کے باوجود بھی سطح تین میں رکھا گیا اور اسی پابندی کو مستقل کیا گیا ہے تاکہ کورونا وبا کے پھیلاؤ پر مکمل طور پر قابو میں کیا جائے۔