ممبئی میں اچانک کورونا مریضوں میں اضافہ’ایک دن میں739؍متاثرین ٗانتظامیہ اور محکمہ صحت کے افسران الرٹ

ممبئی میں کورونا کی روک تھام کے لیے کورونا ٹیسٹنگ کوبڑھایا جائے:اقبال سنگھ چہل
ممبئی:۔(نامہ نگار) مہاراشٹر کے دارالحکومت ممبئی میں ایک بار پھر کورونا وائرس کے حوالے سے تشویشناک خبریں موصول ہورہی ہیں۔ممبئی میں ایک بار پھر کوروناوائرس نے اپنی پوری طاقت کے ساتھ ظاہر ہونا شروع ہوگیا ہے۔گزشتہ۲۴؍گھنٹوں کے دورانممبئی میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے ۷۳۹؍نئے معاملے سامنے آئے۔ جو کہ۴؍ فروری کے بعد ایک دن میںآنے والے متاثرین کی سب سے زیادہ تعداد ہے۔اس کے ساتھ ہی مہاراشٹر میں کورونامتاثرین کی تعداد۱۰۰۰؍سے تجاوز کر گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ریاست میں۲۴؍ گھنٹوں میں کورونامتاثرین میں۵۲؍فیصد کا اضافہ دیکھا گیا ہے جبکہ ممبئی میں۴۶؍ فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ اس سے قبل۴؍ فروری کو ممبئی میں انفیکشن کے ۸۴۶؍ کیس درج کیے گئے تھے۔

دوسری جانب بی ایم سی نے کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے حوالے سے جنگی بنیادوں پر ٹیسٹنگ بڑھانے کو کہا ہے۔ ممبئی میونسپل کارپوریشن مطابق حالانکہ پچھلے ۲۴؍ گھنٹوں کے دوران انفیکشن کی وجہ سے موت کا کوئی نیا کیس درج نہیں ہوا ہے۔ شہر میں فی الحال ۹۷۰،۲؍کورونا سے متاثرین مریض ہیں۔ ممبئی میں اب تک کورونا انفیکشن کے کل۵۴۱،۶۶،۱۰؍ کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔ جبکہ۵۶۶،۱۹؍ مریضوں کی اموات واقع ہوئی ہیں۔۲۴؍ گھنٹوں کے دوران ایشیائ کی سب سے بڑاسلم علاقہ دھاراوی سلم کالونی میںکورونا کے نئے معاملات سامنے آنا شروع ہوگئے ہیں۔بی ایم سی کے ایک اہلکار نے بتایا کہ دھاراوی میں۱۰؍نئے معاملات سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد۳۷؍ہوگئیں ہیں۔مئی کے پہلے ہفتے سے اس کچی آبادی والے علاقے میں کوروناکا ایک بھی مریض نہیںتھا۔مگر۱۵؍ مئی کے بعد انفیکشن میں مسلسل اضافہ ہوتا رہا۔

عہدیدار نے بتایا کہ دھاراوی میں کورونا کے متاثرین کی کل تعداد۷۰۷،۸؍ہوگئی ہے۔جبکہ ۲۵۲،۸؍لوگوں نے کورونا کو شکست دے کر بازیاب ہوکر اپنے گھروں کو روانہ ہوگئے ہیں۔ اور۴۱۹؍ لوگ لقمہ اجل بن گئے ہیں۔ممبئی میں ۲۵؍مئی۲۱۸؍، ۲۶؍مئی ۳۵۰؍، ۲۷؍مئی ۳۵۲؍، ۲۸؍مئی ۳۷۵؍،۲۹؍مئی ۳۷۵،۳۰؍مئی ۳۱۸؍، ۳۱؍مئی ۵۰۶، یکم جون ۷۳۹؍سامنے آنے والے معاملات کے پیش نظر بی ایم سی کے کمشنر آئی۔ایس۔ چہل نے بی ایم سی انتظامیہ سے الرٹ رہنے کو کہا ہے۔ چہل نے ممبئی میں کورونا کی روک تھام کے لیے ممبئی میں ٹیسٹنگ بڑھانے کو کہا ہے۔ اس کے علاوہ۱۲؍ سے۱۸؍برس کے بچوں کو زیادہ سے زیادہ خوراک دینے، جمبو سنٹر کو دوبارہ تیار رکھنے اور پرائیویٹ ہسپتالوں کو الرٹ رہنے کی ہدایات دی گئی ہیں۔اقبال سنگھ چہل نے کورونا کی تشویشناک صورتحال کو دیکھتے ہوئے وزیراعلی کی سرکاری رہائش گاہ ورشا پران سے ملاقات کرکے حالات سے آگاہ کیاانہوں نے ملاڈ جمبو سنٹر کا خاص طور پر ذکرکرتے ہوئے کہاکہ اسے ترجیحی بنیادوں پر تیار رکھا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ دراصل وزیراعلی ادھو ٹھاکرے نے حال ہی میں کہا تھا کہ کورونا کے کیسز بڑھ رہے ہیں، اس لیے لوگوں کو حفاظت کو مدنظر رکھتے ہوئے ماسک لگانا چاہیے۔ ٹاسک فورس ممبئی میں ماسک کو لازمی بنانے کا حتمی فیصلہ کرے گی۔ چہل نے بی ایم سی حکام کو بتایا کہ ممبئی میں روزانہ نئے کیسز بڑھ رہے ہیں اور مانسون آنے والا ہے۔ ایسے میں اب یہ کیسز تیزی سے بڑھیں گے۔ اس لیے محکمہ صحت اور تمام متعلقہ محکموں کو چوکنا رہنے کی ضرورت ہے۔