جی پی ایس سسٹم متعارف کرنے کا فیصلہ ، سفرکو آسان بنانے حکومت کی مساعی
نئی دہلی: مرکزی وزیرروڈ ٹرانسپورٹ نتن گڈکری نے لوک سبھا کو بتایا کہ ملک بھر میں آئندہ سال سے تمام ٹول پلازا ختم کردیئے جائیں گے، اس کی جگہ GPS سسٹم متعارف کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تمام ٹول پلازا ختم کرنے کے منصوبے پر کام کر رہی ہے تاکہ لوگوں کو سڑک کے ذریعے سفر کرنے پر ہی ٹول ادا کرنا پڑے گا۔اترپردیش کے امروہہ حلقہ سے بی ایس پی کے رکن پارلیمنٹ کنور دانش علی نے پارلیمنٹ میں میونسپل ٹول کا معاملہ اٹھایا۔ جس پر گڈکری نے یہ جواب دیا۔گڈکری نے ماضی کی حکومتوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے چھوٹے ٹول پلازوں کا قیام کریم کھانے کیلئے کیاگیاتھا۔ انہوں نے کہا کہ شہر کی سرحدوں پر اس طرح کے ٹول لگانا غلط ہے۔ انہوں نے کہا کہ سفر جتنا ہوگا ٹول ٹیکس بھی اتنا ہی ادا کریں ۔نتن گڈکری نے کہا ، “اگر ہم ٹول پلازے بند کردیں تو ، سڑک کی تعمیراتی کمپنیاں ہم سے معاوضے کا مطالبہ کریں گی۔ “ٹول کو ختم کرنے کا مطلب ہے ٹول گیٹ کو ختم کرنا ہے۔حکومت فی الحال ایک ایسی ٹکنالوجی پر کام کر رہی ہے جس کے استعمال سے آپ کے سفر کو آسان بنایاجائیگا۔ جہاں آپ شاہراہ پر داخل ہوتے ہی جی پی ایس کی مدد سے آپ کی تصویر لی جائیگی۔ جہاں سے آپ شاہراہ سے باہر نکلتے ہیں وہاں بھی ایک اور تصویر لی جائیگی۔ گڈکری نے کہا کہ اس کا مطلب ہے کہ جب بھی آپ شاہراہ پر سفر کرتے ہیں یا سڑک کا استعمال کرتے ہیں تو آپ کو ایک ہی ٹول ٹیکس ادا کرنا ہوگا۔ حال ہی میں ایف اے ایس ٹیگ کو کیش لیس لین دین کے لئے مکمل طور پر نافذ کیا گیا ہے۔ اس کی مدد سے ، آپ ٹول پلازہ پر لگنے والی لائن سے چھٹکارا حاصل کرسکتے ہیں۔روسی حکومت کی مدد سے گلوبل پوزیشننگ سسٹم کا استعمال کرتے ہوئے مودی حکومت ملک کو ٹول فری بنانے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ مرکزی وزیر نے بتایا کہ جی پی ایس کا استعمال کرتے ہوئے سفر کے دوران ٹول ٹیکس کا حصول آپ کے بینک اکاؤنٹس کے ذریعہ کیاجائیگا۔جس سے شفاف ٹرانزیکشن کو یقینی بنایاجائیگا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں