• 425
    Shares

کلکتہ23اگست (یواین آئی) مغربی بنگال کالج سروس کمیشن نے ریاستی اہلیتی ٹسٹ کے امتحان میں عربی کے مضمون کو شامل کرنے کا اعلان کیا ہے۔اس کے ساتھ ہی ماحولیاتی سائنس اور ایم بی اے کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ریاستی اہلیتی ٹسٹ میں عربی کوشامل کرنے کیلئے حالیہ دنوں میں بنگال کے مختلف کالجوں اور یونیورسٹیوں کے عربی شعبہ میں پڑھنے والے طلبا نے مہم چلا ئی تھی اور کالج سروس کمیشن کو میمورنڈم بھی دیا گیا تھا۔خیال رہے کہ مغربی بنگال کالج اور یونیورسٹیوں میں اساتذہ کی تقرری کے لئے نیٹ، جی آر ایف یا پھر ریاستی اہلتی ٹسٹ میں کامیابی حاصل کرنا ضروری ہے۔دوسری جانب سیٹ کے امتحانات کے سوالات بنگالی زبان میں لیا جائے گا۔مغربی بنگال سروس کمیشن گزشتہ 27سالوں ریاستی اہلیتی ٹسٹ کے امتحان کا انعقاد کررہا ہے۔کالج سروس کمیشن نے 1994 سے اب تک 22 امتحانات لیے ہیں۔ اتنے عرصے سے سیٹ کے سوالیہ پرچے انگریزی میں لئے جاتے تھے۔ لیکن طلباایک عرصے سے مطالبہ کررہے تھے بنگالی زبان میں سوالیہ پرچہ بنایا جائے۔

کالج سروس کمیشن نے ریاستی اہلیت ٹسٹ یا سیٹ لینے کا نوٹیفکیشن پہلے ہی جاری کر دیا ہے۔ کالج سروس کمیشن اگلے سال 9 جنوری کو سیٹ لے گا۔ کالج سروس کمیشن نے درخواستیں جمع کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے۔ کمیشن ذرائع کے مطابق اس سال نیوز سیٹ کے تحت مزید تین مضامیان شامل کیے گئے ہیں۔ اس سال سیٹ کے تحت ماحولیاتی سائنس، ایم بی اے، عربی مضامین نئے شامل کیے گئے ہیں۔ ؎

کمیشن کے انتظامیہ کے مطابق سیٹ کے امتحان میں عربی کو شامل کرنے کیلئے ایک عرصے سے مطالبہ کیا جارہا ہے۔اس سال مجموعی طور پر تین مضامین کو شامل کیا گیا ہے۔کالج سروس کمیشن کے مطابق، تاریخ، فلسفہ، تعلیم جیسے مضامین کے سوالات بنگالی میں ہونگے۔دوسری جانب اسسٹنٹ پروفیسرز کی تقرری کے لیے تقریبا 32 ہزار درخواستیں کالج سروس کمیشن میں جمع ہوئی ہے۔ کمیشن ذرائع کے حالات نارمل ہونے کے بعد ہی انٹرویو کا عمل شروع کیا جائے گا۔کمیشن نے درخواستوں کی جانچ شروع کردی ہے۔
اس و قت لوکل ٹرینیں نہیں چل رہی ہے اسی وجہ سے کالج سروس کمیشن نے انٹرو یو نہیں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔گزشتہ سال ریاستی اہلیت ٹسٹ یا سیٹ کے لیے تقریبا75,000درخواستیں جمع کی گئی تھی۔امید ہے کہ اس سال مزید درخواستیں جمع کی جائیں گی۔نوٹی فیکشن کے مطابق 15ستمبر تک جمع کرائی جائے گی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔