اردھاپور(شیخ زبیر) جماعت اسلامی ہند شعبہ خواتین کی جانب سے ایک کل ہند مہم بعنوان ”مضبوط خاندان مضبوط سماج “۹۱ فروری سے ۸۲ فروری تک منائی جارہی ہے ۔اس مہم کے تحت مضبوط سماج کی تشکیل کے لیے سماج کی بنیادی اکائی ”خاندان“ کو مضبوط کرنے اور خاندان کی پامال ہوتی روایات کو بحال کرنے کی کوشش کی جائے گی۔اس طرح کی

معلومات اردھاپور میں اس مہم کے کنوینر قاضی متین فاطمہ نے اپنے پریس ریلیز کے ذریعہ دی ۔

قاضی متین فاطمہ نے اپنے جاری کردہ تحریری بیان کہا کہ آج ہمارے ملک اور سماج میں گھریلو تشدد ،جہیز کی لعنت،خاندانی جھگڑوں،طلاق کے بڑھتے معاملے،بزرگوں اور عمر رسیدہ لوگوں کو گھر سے بے گھر کرکے اولڈ ایج ہوم میں بھیجنے،اور آپسی تنا زعات میں آضافہ ہوا ہے ،یہ سب ٹوٹتے بکھرتے خاندان اور گرتی معاشرتی روایات کی صورت میں

ظاہر ہورہی ہیں ۔خاندان سماج ک بنیادی اساس ہے اگر خاندان مضبوط اور مستحکم نہیں ہوگا تو سماج میں امن و سکون اور مضبوطی نہیں آئے گی ۔اسی بات کو مد نظر رکھتے ہوئے جماعت اسلامی ہند شعبہ خواتین نے ایک ملک گیر مہم ”مضبوط خاندان مضبوط سماج “کا انعقاد کیا ہے ۔ہمارے شہر اردھاپور میں بھی الحمد اللہ اس سلسلے میں انفرادی اور اجتماعی ملاقاتوں کے ذریعہ ،تشہیری مواد کی تقسیم کے ذریعہ ہم پورے شہر میں 10ہزار خواتین اور خاندانوں تک پہنچے گے اور انہیں اسلام کی عائلی تعلیمات سے واقف کرائیں گے ۔
موجودہ حالات کے پیش نظر مہم کے دوران صرف ایسی سرگرمیاں انجام دی جارہی ہیں جس میں سوشل ڈسٹنسنگ کا خیال رکھا جاسکے ۔مہم کے

دوران محلہ کی سطح کے چھوٹے چھوٹے پروگرام منعقد کیے جائیں گے ،سماجی شخصیات سے ملاقاتیں کی جائیں گے۔اسی طرح مہم کے عنوان پر ایک کوئز مقابلہ بھی منعقد کیا گیا ہے جس میں ہر عمر کی خواتین اور لڑکیا ں حصہ لے سکتی ہیں ۔کوئز مقابلہ کی انچارج عرفی صدیقہ کے مطابق اس مقابلہ میں طالبات اور خواتین کو گھر بیٹھے ایک کوئز پیپر حل کرکے دینا ہے ،مقابلہ میں حصہ لینے والی تمام بہنوں کو سرٹیفیکٹ دیئے جائیں گے ساتھ ہی اول،دوم اور سوم انعامات کے علاوہ پانچ ترغیبی انعامات بھی رکھے گئے ہیں ۔اس کوئز مقابلہ کا مقصد مضبوط خاندان اور عائلی قوانین سے خواتین کو واقف کروانا ہے ۔مقامی سطح پر اس مہم کی سرگرمیوں کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جس میں جماعت اسلامی ہند اردھاپور کی مقامی ناظمہ شاہنور بیگم صاحبہ ،مقامی سیکریٹری عرفی صدیقہ صاحبہ ،مہم کنوینر قاضی متین فاطمہ ،شاہین خانم صاحبہ،ماہ متین خانم ،فردوس فاطمہ اور جی آئی کی مقامی صدر عالیہ خانم صاحبہ شامل ہیں ۔اس کے علاوہ مقامی جماعت کی شعبہ خواتین کی سیکڑوں کارکنان بھی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہی ہیں ۔