مشہور سماجوادی لیڈر شرد یادو کا 75 سال کی عمر میں انتقال

183

گروگرا م :مشہور و معروف سماجی وادی لیڈر شرد یادو کا 75 سال کی عمر میں انتقال ہو گیا ہے۔ شرد یادو کی بیٹی سبھاشنی یادو نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹوئٹر پر ان کے انتقال کی خبر دی۔ انھوں نے ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ ’’پاپا نہیں رہے۔‘‘ واضح رہے کہ شرد یادو چار مرتبہ بہار کے مدھے پورہ سیٹ سے رکن پارلیمنٹ رہے ہیں۔ وہ جنتا دل یو (جے ڈی یو) کے سربراہ بھی رہے ہیں اور مرکزی حکومت میں وزیر بھی۔

شرد یادو کی طبیعت کچھ دنوں سے علیل چل رہی تھی اور وہ گروگرام کے فورٹس اسپتال میں علاج کرا رہے تھے۔ جمعرات (12 جنوری) کو انھوں نے اسپتال میں آخری سانس لی۔ شرد یادو کے انتقال کی خبر ملنے کے بعد آر جے ڈی لیڈر اور بہار کے نائب وزیر اعلیٰ تیجسوی یادو نے ٹوئٹ کر اظہارِ غم کیا ہے۔ انھوں نے لکھا ہے ’’منڈل مسیحا، آر جے ڈی کے سینئر لیڈر، عظیم سماجوادی لیڈر، میرے سرپرست اور عزت مآب شرد یادو جی کے انتقال کی خبر سے تکلیف میں ہوں۔ کچھ کہنے کی حالت میں نہیں ہوں۔ ماتا جی اور بھائی شانتنو سے بات ہوئی۔ دکھ کے اس وقت میں پوری سماجوادی فیملی غمزدہ کنبہ کے ساتھ ہے۔‘‘