علی گڑھ: گذشتہ کچھ دنوں سے متنازعہ بیانات کو لیکر سرخیوں میں رہنے والے اکھل بھارتیہ سنت پریشد پیٹھا دھیشور شیو شکتی دھام ڈاسنا کے قومی کنوینر یتی نرسمہانند سرسوتی نے ایک بار پھر متنازعہ بیان دیا ہے۔ نرسمہا نند نے کہا کہ مسلم کو کہیں بھی پڑھا لو ، رہتا جہادی ہی ہے ۔ اتنا ہی نہیں سابق صدر عبد الکلام کو بھی انہوں نے نمبر 1 جہادی بتایا ہے ۔

بتادیں کہ نرسمہا نند سرسوتی نے الزام لگایا تھا کہ عبد الکلام نے ہی ایٹم بم کے فارمولے پاکستان کو دئے تھے۔ عبدالکلام نے تمام پروٹوکول توڑ کر افضل گورو اور اس کی والدہ سے ملاقات کی تھی۔ سرسوتی نے دارالعلوم دیوبند ، اے ایم یو جے این یو کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہ اے ایم یو ہی تھا جس نے ہندوستان کو تقسیم کیا تھا۔ دنیا بھر کے وانٹیڈ دہشت گرد اے ایم یو میں ہی پناہ پاتے ہیں۔ اتنا ہی نہیں ، انہوں نے کہا کہ 2029 تک ہندوستان کا وزیر اعظم بھی مسلمان ہوگا ۔