لندن : مسلمانوں کی سب سے بڑی امبریلا آرگنائزیشن مسلم کونسل آف برطانیہ نے پہلی مرتبہ ایک خاتون کو اپنا لیڈر منتخب کیا ۔ زارا محمد مسلم کونسل سے وابستہ گروپوں کے پول میں سب سے زیادہ سے ووٹ حاصل کرنے کے بعد نئی سکریٹری جنرل منتخب ہوئی ہیں ۔

انتخاب کے بعد زارا نے کہا کہ بڑی مسلم تنظیم کے اس عہدے کیلئے میری تقرری باعث فخر ہے ۔ وہ ہارون خان کی جگہ لیں گی ، جنہوں نے سربراہ کی حیثیت سے زیادہ سے زیادہ 4 سال کی مدت پوری کر لی ہے ۔

گلاسگو سے تعلق رکھنے والی 29 سالہ زارا محمد نے اپنے انتخاب پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں امید ہے کہ وہ خواتین اور نوجوان کو زیادہ سے زیادہ قائدانہ کردار حاصل کرنے کیلئے متحرک اور متاثر کریں گی ۔
انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں خواتین بعض اوقات قائدانہ کردار ادا کرنے میں ہچکچاہٹ محسوس کرتی ہیں ، حالانکہ وہ اس منصب کیلئے زیادہ اہلیت بھی رکھتی ہیں ۔
زارا محمد کے مسلم کونسل آف برطانیہ کی سکریٹری جنرل منتخب ہونے پر لندن کے میئر صادق خان نے ایک ٹویٹ کرکے خوشی کا اظہار کیا ہے ۔

اپنے ٹویٹ میں صادق خان نے لکھا کہ زارا محمد کی تقرری شاندار ہے ۔ انہوں نے زارا محمد کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ زارا ملک بھر میں ہماری برادری کی بہتری کیلئے اس تنظیم کو زیادہ بلندیوں تک لے جانے کا کام جاری رکھیں گی ۔
خیال رہے کہ زارا محمد ہیومن رائٹس لا میں ماسٹرز گریجویٹ ہیں اور وہ ایک ٹریننگ اینڈ ڈیولپمنٹ کنسلٹنٹ ہیں ۔ اس سے قبل وہ مسلم کونسل آف برطانیہ کی اسسٹینٹ سکریٹری جنرل کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہی تھیں ۔