سوشیوریفارم اینڈ ایمپاورمنٹ سوسائٹی کے زیراہتمام جلسئہ تہنیت میں محمدتقی ‘ محمدیسین علی اورخلیل الدین کی تقاریر
ناندیڑ::27 نومبر۔(راست) سوشیوریفارم اینڈ ایمپاورمنٹ سوسائٹی ناندیڑ اوراصلاح معاشرہ تعمیر ملت کمیٹی ناندیڑ کے زیراہتمام آج ہفتہ 27نومبر کودوپہرساڑھے گیارہ بجے سوسائٹی کے دفتر برکت کامپلکس ‘رضاچوک میںروزنامہ ”ور ق تازہ“ کے مدیراعلیٰ محمدتقی کی 40 سالہ صحافتی خدمات کے اعتراف میں ایک جلسہ تہنیت کاانعقاد عمل میں آیا ۔انھیں اور ورق تازہ ناندیڑ کے مدیرمحمدنقی شاداب کوگلدستہ پیش کیاگیا علاوہ ازیں جمعیتہ علماءیہند ناندیڑ(ارشدمدنی ) کی نو منتخبہ ضلع و شہر مجلس عاملہ کے عہدیداران حافظ عبدالحفیظ(ضلع صدر) ‘ مولاناایوب قاسمی (جنرل سیکریٹری) اورمفتی احمد قاسمی (شہرصدر) کوتہنیت پیش کی گئی ۔جلسہ کی صدارت محمدخلیل الدین کارگزار صدر(سوشیو ریفارم سوسائٹی) نے انجام دی ۔

ابتداءمیں سوسائٹی کے ذمہ دار یسین علی انجینئر نے سوشیوریفارم اینڈ اپمپاورمنٹ سوسائٹی کے اغراض ومقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ یہ تنظیم 26 جنوری 2017 میںقائم ہوئی تھی ۔سوسائٹی ”نکاح کوآسان کرو کہ زنا مشکل ہوجائے “ اس حدیث کوعام کرنے اوراس کوعملی جامہ پہنانے کے لئے شہرمیں مہم چلائی ۔ محلوں اورمساجد میں لوگوں سے ملاقاتیں کیں اوران سے شادیوں میںفضول خرچی نہ کرنے اور سادہ شادیاں کرنے کی اپیل کی۔اس کے علاوہ ”سنت پیام سنٹر“ کے تحت مناسب رشتے طئے کروائے۔ اس طرح اب تک سینکڑوں کی تعداد میں شادیاں کروائیں جوکامیاب ہوئی ہیں ۔ورق تازہ کے مدیراعلیٰ محمدتقی نے اپنی تقریر میں سوسائٹی کے معرفت اصلاح معاشرہ اوردیگر فلاحی کاموںں کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ عصر حاضرمیں اصلاح معاشرہ مہم کے ساتھ ہی مسلمانوں میںتعلیمی شعوربیداری مہم بھی چلانا ضروری ہے ۔ مسلم لڑکوں میںتعلیم کارجحان کم ہورہا ہے ۔جبکہ ان کے مقابلے مسلم لڑکیاں بڑی تعداد میں تعلیم حاصل کررہی ہیں۔ لیکن مسلمانوں ی آبادی کے تناسب سے یہ تعداد بہت کم ہے ۔

انھوں نے کہا کہ گزشتہ ماہ ناندیڑ اردو گھر اردو ٹیچرس کےلئے ٹی ای ٹی کاورکشاپ20دنوں سے جاری رہا ہے لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑتاا ہے کہ ورکشاپ میں 20فیصد معلمین نے شرکت کی ۔ محمدتقی نے اپنی تقریر جاری رکھتے ہوئے کہاکہ سرکاری ملازمتیں دن بدن کم ہوتی جارہی ہیں ۔ا سلئے ہمارے نوجوانوں پرائیوٹ سیکٹرمیں برسر روزگار ہیں ۔ اگر ہم سیول سروسیس میں مسلمانوں کے تناسب کی بات کریں تو ہمیں بہت مایوسی ہوگی ۔ ناندیڑ جیسے چھوٹے شہر میں ہمارے دلت بھائی سیول سروسیس امتحان کا کوچنگ سنٹرقائم کرسکتے ہیں تو ہم مسلمان کیوں نہیں قائم کرسکتے ہیں۔انھوں نے مسلمانان ناندیڑ سے اپیل کی کہ وہ اپنے بچوں کواعلٰی ملازمتوں پرفائز دیکھناچاہتے ہیں تو انھیں اپنا خود کاایم پی ایس سی اور یو پی ایس سی کوچنگ سنٹرقائم کرنا ہوگا ۔ حکومت کی طرف دیکھنے کے بجائے ہم خودعملی اقدام کریں ۔ ہمار ے بچے بھی IPS‘IAS‘ ITS‘IFS بنیںگے ۔ آخر میں محمدتقی نے اپنی چالیس سالہ صحافتی سفر کی مختصرتفصیلات بتائیں۔صدرجلسہ محمدخلیل الدین نے صدارتی تقریرکرتے ہوئے کہاکہ خدمت خلق سے اللہ ملتا ہے ۔اس لئے ہم مسلمانوں کو خدمت خلق کےلئے اپنادست تعاون بڑھاناچاہئے ۔ملت اسلامیہ کے کئی مسائل ہیں۔ان کی زندگی کی راہ میں کئی مشکلات حائل ہیں۔ لیکن ہم ان سب کامقابلہ دلیری سے کرنا ہے ۔ اس جلسہ میںسوسائٹی کے ممبران کے علاوہ دیگر افرادنے بھی شرکت کی۔ پروگرام کی نظامت کے فرائض محمدنعیم خان نے بحسن وخوبی انجام دئےے ۔آخر میں مفتی احمدقاسمی کی دعا پرجلسہ کااختتام عمل میں آیا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔