مسجد اقصی کی شناخت بدلی گئی تو پورے علاقہ کے لئے دھماکہ خیز واقعہ ہو گا: حسن نصراللہ

412

ایرانی حمایت یافتہ لبنانی ملیشیا حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ نے اگر اسرائیل نے مسجد اقصی کی حیثیت اور شناحت بدلنے کی کوشش کی تو یہ خطے کے لیے دھماکہ خیز ہو گی۔ مسجد اقصی کے خلاف اقدامات کا رد عمل صرف فلسطین کے اندر سے نہیں آئے گا باہر سے بھی ہو گا۔

حزب اللہ کے سربراہ کا یہ بیان اسرائیل کے انتہاپسندی کی شہرت کے حامل وزیر بین گویر کے مسجد اقصی کے منگل کے روز مسجد اقصی میں جانے اور اس کی بے حرمتی کی خبروں کے بعد کیا گیا ہے۔ بین گویر نے مسجد اقصی کے بارے میں یہ بھی کہہ رکھا ہے یہ صرف مسلمانوں مسجد نہیں ہے بلکہ یہودیوں کی بھی ہے۔

بین گویر کے مسجد اقصی کے دورے پر زخت ردعمل سامنے آیا ہے ۔ نیتن یاہو کے دفتر نے مسجد اقصی کے سٹیٹس کو کے بارے میں ایک بیان میں کہا ہے کہ مسجد اقصی کی موجودہ حیثیت صرف مسلمانوں کو مسجد صرف مسلمانوں کی عبادات کے لیے ہے۔ تاہم ان کی کابینہ کے اہم ترین وزرا مسجد اقصی سمیت پورے یروشلم کو یہودیانے کا ایجنڈا لے کر آئے ہیں۔