مرکزی حکومت شاہین باغ کے 30 ہزار مسلم خواتین کو نہیں ہٹاپارہی ہے:توگڑیا

فتح پور، 23 فروری (یو این آئی)انٹرراشٹریہ ہند وپریشد کے صدر پروین توگڑیانے مرکزی حکومت پر طنز کرتے ہوئے اتوار کو یہاں کہا ہے کہ گجرات میں سات لاکھ سے زیادہ پٹیلوں کو ہٹادینے والی حکومت دہلی کے شاہین باغ کے دھرنے پر بیٹھی تیس ہزار خواتین کو نہیں ہٹاپارہی ہے۔


مسٹر توگڑیا نے یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ شاہین باغ میں مسلم خواتین کے شہریت ترمیمی قانون کے خلاف مظاہرہ سے دہلی والوں کو زبردست پریشانیاں جھیلنی پڑرہی ہیں۔ ان کے دھرنے کو 70 دن ہوگئے ہیں لیکن سبھی دھرنا ختم کرنے کو تیار نہیں ہیں۔

♨️Join Our Whatsapp 🪀 Group For Latest News on WhatsApp 🪀 ➡️Click here to Join♨️


انہوںنے سوال کیا کہ ایسی کیا مجبوری ہے کہ جو مظاہرہ کررہی خواتین کو نہیں ہٹایاجارہا ہے۔
انہوںنے کہا کہ آج بے روزگاری بھیانک صورت اختیار کرچکی ہے۔ کسان، عام آدمی سب پریشان ہیں۔ پہلے ایم بی بی ایس کی پڑھائی کم پیسوں میں ہوجاتی تھی،آج لاکھوں روپے اس پڑھائی پر خرچ ہورہے ہیں۔ امیر غریب ہوتے جارہے ہیں اور غریب اور زیادہ غریب، اسے بدلنا ہوگا۔
انہوںنے کہا کہ رام مندر تو اب بننا شروع ہوجائے گا لیکن رام راجیہ ابھی آنا باقی ہے۔

WARAQU-E-TAZA ONLINE

I am Editor of Urdu Daily Waraqu-E-Taza Nanded Maharashtra Having Experience of more than 20 years in journalism and news reporting. You can contact me via e-mail waraquetazadaily@yahoo.co.in or use facebook button to follow me