مردانہ کمزوری کے لیے آج کل مرد حضرات حکیموں اور ڈاکٹروں کا رخ کرتے ہیں لیکن قربان جاؤں اپنے آقا کریم ﷺ پر جنہوں نے کئی سو سال پہلے ہی اس کمزور کا علاج بتا دیا تھا . حضرت علی ؑ سے مروی ہے کہ ایاک شخص حضرت محمد ﷺ کے پاس آیا اور کہنے لگا کہ میرے گھر اولاد نہیں ہوتی جس پر آقا کریم نے فرمایا کہ تم انڈوں کا استعمال کیا کرو .

 

حضرت انس سے مروی ہے کہ حضور ﷺ نے فرمایا ہے کہ بدن سے بالوں کو جلدی صاف کرنے سے قوت باہ میں اضافہ کرتا ہے، آپ ﷺ کھجور کو مکھن کے ساتھ کھانا پسند فرماتے تھے ، علمائے بیان کرتے ہیں کہ اگر کھجور کو مکھن کے ساتھ کھا لیا جائے تو انسان کی قوت باہ میں بے حد اضافہ ہوتا ہے. حضرت عبد اللہ بن جعفر سے مروی ہے کہ حضورﷺ فرمایا کرتے تھے کہ پُشت کا گوشت کھایا کرو کیونکہ یہ جسم کے تمام حصوں کے گوشت سے بہتر ہے.

اس حوالے علما کہتے ہیں کہ پشت کے گوشت میں قوت باہ ہوتی ہے اس کے علاوہ بھی اسکے کئی فائدے ہیں، جلدی ہضم ہوتا ہے، سینے میں طاقت پیدا کرتا ہے جبکہ کمر درد کے لیے بھی فائدے مند ہے. حضرت عائشہ سے روایت ہے کہ حضورﷺ حیس کو بہت پسند فرمایا کرتے تھے، حیس تین چیزوں کو ملا کر بنتا ہے جن میں کھجور، مکھن، جما ہوا دہی ، اس غذا سے بھی قوت باہ میں اضافہ ہوتا ہے جبکہ جسم کو قوت ملتی ہے.