تھانے (آفتاب شیخ) مذہب کبھی بھی کسی عورت کی کامیابی میں روکاوٹ نہیں بنتا مذہب نے ہمیشہ عورتوں کو بنلد مقام عطا کیا ہے ۔ اس طرح کا اظہار خیال ممبرا میں یوم خواتین کی نسبت سے نکالی گئی حجاب ریلی میں سماجی کارکن مرضیہ شانو پٹھان نے کیا ۔

انھوں نے کہا کہ عالمی یوم خواتین بین الاقوامی طور پر 8 مارچ کو منایا جاتا ہے۔ اس کا مقصد خواتین کی اہمیت سے آگاہ کرنا اور لوگوں میں خواتین پر تشدد کی روک تھام کے لیے اقدامات کرنے کے لیے ترغیب دینا ہے۔ اسی کو لیکر آج سماجی کارکن کارکن مرضیہ پٹھان نے امرت نگر کے درگاہ روڑ سے لیکر ممبرا پولیس اسٹیشن تک ایک حجاب ریلی کا انعقاد کیا۔

جس میں کثیر تعداد میں طلباء ، بچے و خواتین موجود تھے۔ اس دوران مرضیہ پٹھان نے بتایا کہ ملک میں اس روز الگ الگ طریقوں سے یوم خواتین منایا جاتا ہے ‘ اسلئے ہم لوگوں نے اس دن کو حجاب ڈے کے طور منانے کا فیصلہ کیا۔ کیونکہ پچھلے کئی دنوں سے حجاب کو لیکر مخالفت کی جارہی ہے۔ جب ملک سبھی سماج کے لوگوں کو اپنے اپنے طریقے سے منانے کا حق ہے ،اسلیئے ہم نے سوچا کہ عالمی یوم خواتین پر یوم حجاب کے طور پر منائے۔ مرضیہ پٹھان نے بتایا کہ ایک وہ خواتین ہے جو گھونگھٹ پہنتے ہے ‘ ایک وہ خواتین ہے جو جینس پہنتے اور ایک ہم ہے جو حجاب پہنتے ہے۔ اسلئے ایک ملک میں بھید بھاو کیوں ؟ جب دیگر لوگ اپنے مذہب کو مانتے ہے تو ہم بھی اپنے مذہب کو مانتے ہے ‘ اسلیئے آج ہم لوگوں نے عالمی خواتین پر یوم حجاب منایا۔ اس موقع پر چارٹیڈ اکاونٹنٹ مہ جبین بامنے نے بتایا کہ حجاب ہمارا حق ہے اور ہندوستان کا۔آئین ہے کہ سب کو اپنے مذہب کو ماننے کی آزادی ہے۔ وہیں نگر سیویکا عشرین راوت نے بتایا کہ حجاب پر ہمیں فخر یے ، حجاب ہی ہماری پہچان ہے ، اس تقریب کے زریعے لوگوں کو یہ پیغام ہے کہ حجاب کو برا نہیں سمجھو ۔ اس تقریب کے دوران تقریبا 2 ہزار خواتین کو میڈل دیکر انکی حوصلہ افزائی کی گئی۔

عالمی یوم خواتین، سب سے پہلے 28 فروری کو 1909 میں امریکا میں منایا گیا، پہلی عالمی خواتین کانفرنس 1910 میں کوپن ہیگن میں منعقد کی گئی، 8 مارچ 1913 کو یورپ بھر میں خواتین نے ریلیاں نکالیں اور پروگرام منعقد کیے اور اب برسوں سے 8 مارچ کو عالمی سطح پر یوم خواتین منایا جاتا ہے۔ چین، روس، نیپال، کیوبا اور بہت سے ممالک میں اس دن خواتین ورکرز کی چھٹی ہوتی ہے اور دیگر ممالک کی طرح بر صغیر میں بھی یہ دن بڑے جوش و خروش سے منایا جاتا ہے۔ اس موقع پر مرضیہ پٹھان ، عشرین راوت ، فرزانہ شاکر شیخ ،مہ جبین بامنے ، شاہینہ آعظمی سمیت کثیر تعداد میں طلباء و خواتین موجود تھے