مہلوکین میں16 خواتین ، 20 مرد اور ایک بچہ شامل۔ لواحقین کو پانچ ، پانچ لاکھ روپئے ایکس گریشیا ۔ چیف منسٹر چوہان کا اعلان

سدھی : مدھیہ پردیش کے ضلع سدھی کے رام پورنایکن تھانہ علاقہ میں آج صبح بانساگر ڈیم پراجکٹ سے جڑی نہر میں بس کے گرنے سے 45 مسافروں کی موت ہوگئی اور 7 افراد کو بحفاظت بچالیا گیا۔ ریوا کے ڈیویژنل کمشنر راجیش جین نے بتایا کہ حادثہ کی شکار بس کو بھی نکال لیا گیاجس میں زائداز 50 مسافرین سوار تھے۔ مجموعی طور پر 37 افراد کی موت ہوئی ہے، جن میں 16 خواتین ، 20 مرد اور ایک بچہ شامل ہے۔ 7 افراد شروعات میں ہی کسی طرح تیر کر نہر سے باہر آ گئے تھے ۔ انہوں نے کہاکہ راحت رسانی کے کام تقریبا مکمل ہو گئے ہیں۔ تاہم اس خدشے کی وجہ سے کہ کچھ مسافر نہر میں پانی کے بہاؤ سے بہہ تو نہیں گئے ہیں ، آس پاس کے علاقوں میں تلاش جا ری ہے ۔ جین نے بتایا کہ سدھی ضلع ہیڈکوارٹر سے 80 کیلو میٹر دور حادثے کی اطلاع موصول ہوتے ہی پولیس اور انتظامیہ موقع پر پہنچ گئے تھے ۔ وہ خود صبح 9 بجے ہی جائے حادثہ پر پہنچ گئے اور راحت رسانی کے کا موں میں تیزی لائی گئی ۔ پولیس کے ذرائع نے بتایا کہ بانساگر ڈیم کے ریزروائر سے جڑی نہر میں20 فٹ سے زائد پانی بھرا تھا ۔ حادثہ کی اطلاع موصول ہونے کے بعد 40 کیلو میٹر دور واقع ڈیم سے پانی چھوڑنے کا کام بند کردیا گیا ۔ اس وجہ سے نہر کی سطح کم ہوگئی اور راحت رسانی کے کاموں میں تیزی لائی گئی ۔ حادثہ کی اطلاع موصول ہوتے ہی کلکٹر رویندر کمار چودھری بھی عملہ کے ساتھ جائے وقوع پر پہنچے ۔ذرائع نے بتایا کہ یہ حادثہ ضلع صدر مقام سے 80 کلومیٹر دور پیش آیا اور کچھ مسافروں کو نکال کر نزدیکی اسپتالوں میں منتقل کیا گیا۔ بس صبح سدھی سے روانہ ہوئی تھی اور ستنا جارہی تھی ۔ صبح تقریباََ آٹھ بجے چھوہیا وادی میں جام کی وجہ سے نزدیکی دوسرے راستے سے ستنا کے لئے روانہ ہوئی اور بانساگر ڈیم پروجیکٹ کی نہر میں جا گری۔چیف منسٹر مدھیہ پردیش شیوراج سنگھ چوہان نے 37مسافروں کی موت پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے ان کے لواحقین کو پانچ، پانچ لاکھ روپے کی ایکس گریشیا کا اعلان کیا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق چوہان نے کہا کہ یہ حادثہ بے حد تکلیف دہ ہے۔ انہوں نے مہلوکین کے تئیں تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سوگوار لواحقین کے ساتھ دکھ کی اس گھڑی میں وہ اور پوری حکومت ان کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حادثہ کی اطلاع کے بعد سے ہی وہ سدھی ضلع اوار ریوا ڈیویژن انتظامیہ کے رابطے میں تھے اور مسلسل انہیں ہدایت دی جارہی تھی۔چوہان نے سدھی حادثہ پر توجہ مرکوز کرنے کے پیش نظر آج کے دیگر سرکاری پروگرام بھی ملتوی کردیئے۔ انہوں نے متعلقہ محکموں کے وزرا کی فوری طور پر میٹنگ طلب کی اور انہیں ضروری ہدایت دیں۔ اس کے بعد آبی وسائل کے وزیر تلسی رام سلاوٹ کو فوری طورپر جائے وقوع پر بھیج دیا گیا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں