مدرسہ میں طالبہ کیساتھ زیادتی کے الزام میں امام کی گرفتاری

2,579

رانچی۔:13. ڈسمبر۔ جھارکھنڈ کے سمڈیگا ضلع کے ایک مدرسے میں آٹھ سالہ بچی کی عصمت دری کے الزام میں ایک امام کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔این ڈی ٹی وی ہندی ویب سائٹ پر شائع خبر کے مطابق پولیس نے پیر کو یہ جانکاری دی۔

کولیبیرا پولیس اسٹیشن کے انچارج رنجیت کمار نے بتایا کہ یہ واقعہ اتوار کو اس وقت پیش آیا جب لڑکی اردو پڑھنے کے لیے مدرسے گئی تھی۔ پولیس افسر نے بتایا کہ 43 سالہ امام نے دیگر طالبات کو گھر بھیجا اور لڑکی کو مدرسے میں اپنے کمرے میں لے گیا جہاں اس نے اس کے ساتھ زیادتی کی۔

پولیس نے بتایا کہ زیادتی کے بعد اس نے لڑکی کو مبینہ طور پر دھمکیاں دیں۔دی اور کہا کہ ایک جن نے اسے مسخر کر لیا ہے۔ لڑکی روتی ہوئی گھر واپس آئی اور اپنے والدین کو واقعہ کے بارے میں بتایا جنہوں نے پولیس میں شکایت درج کرائی۔

اس نے بتایا کہ امام نے دو ماہ قبل بھی اس کے ساتھ مبینہ طور پر زیادتی کی تھی، لیکن پولیس کے مطابق وہ خوف کی وجہ سے انہیں بتا نہیں سکی۔ پولیس نے کہا کہ انہوں نے ملزم کو تعزیرات ہند کی دفعہ 376 (ریپ) اور بچوں کے تحفظ سے متعلق جنسی جرائم (POCSO) ایکٹ کی متعلقہ دفعات کے تحت گرفتار کیا ہے۔