مدارس 20-30 سال چندہ لے کر تعمیر ہوتے ہیں، جنہیں وہ ایک دن میں مسمار کر دیتے ہیں، بدر الدین اجمل

553

گوہاٹی :دہشت گردوں سے رابطہ کے الزام کے بعد کئی مدرسوں کو مسمار کئے جانے پر اے آئی یو ڈی ایف کے سربراہ بدر الدین اجمل نے سخت غم و غصہ کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریاست میں لاکھوں اسکول ہیں، اگر کوئی شخص مجرم قرار دیا جاتا ہے تو صرف اسی کو گرفتار کیا جاتا ہے۔ یہی مدارس کے معاملہ میں بھی ہونا چاہئے اور صرف قصوروار کو ہی گرفتار کیا جانا چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا ’’یہ مدارس غریبوں کو تعلیم یافتہ بناتے ہیں۔ ان میں سے کچھ 20-30 سال چندہ لینے کے بعد تعمیر ہوتے ہیں اور وہ انہیں ایک دن میں مسمار کر دیتے ہیں۔‘‘