برسبین ، 15 جنوری (یواین آئی) ہندوستانی ٹیم کے تیزگیندباز محمد سراج پر برسبین میں کھیلے جارہے چوتھے اور آخری ٹسٹ کے پہلے دن جمعہ کے روز اسٹیڈیم میں موجود شائقین کی جانب سےپھر نسل پرستانہ جملے کسے گئے۔

سراج پر اس سے پہلے سڈنی ٹسٹ کے دوران بھی نسلی تعصب پر مبنی جملوں کا سامنا کرنا پڑاتھا جس کے بعد بی سی سی آئی نے اس پر سخت اعتراض ظاہر کیا تھا اور کرکٹ آسٹریلیا سے سخت کارروائی کی مانگ کی تھی لیکن سراج پر سڈنی کے بعد برسبین میں بھی نسل پرستانہ جملے کسے گئے۔آسٹریلیائی میڈیا کی خبر کے مطابق کچھ ناظرین نے سراج کے علاوہ واشنگٹن سندر کے لئے نازیبا الفاظ کا استعمال کیا۔

سندر نے اس مقابلے سے ٹسٹ میں ڈیبیو کیا ہے۔ حالانکہ ٹیم انتظامیہ نے نہ تو اس معاملے کی تصدیق کی ہے اور نہ ہی میچ ریفری سے اس کی باقاعدہ طور پر شکایت کی ہے۔سڈنی مارننگ ہیرالڈ نے کیٹ نامی ناظرین کے حوالے سے لکھا ، "میرے پیچھے لوگ مسلسل سندراور سراج کو ‘گرب’ کہہ رہے تھے۔” انہوں نے سراج سے کچھ کہنا شروع کیا اور یہ سڈنی کی طرح ہی تھا۔ایک وقت ان میں سے ایک شخص شور مچا رہا تھا، سراج ہماری طرف ہاتھ ہلاؤ، سراج تم ’گرب‘ ہو