متھرا کے سات شہروں میں شراب اور گوشت کی بکری پرلگے گی پابندی، وزیر اعلی یوگی

2

اتر پردیش کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے متھرا میں ایک مذہبی تقریب سےخطاب کرتے ہوئے کل اعلان کیا کہ متھراکے سات شہرورنداون،گووردھن،نندگاؤں،برسانا،گوکل،مہاون اور بلدیو میں جلد ہی شراب اورگوشت کی بکری پر پابندی لگے گی۔انہوں نے ساتھ میں یہ بھی کہا کہ ان کاموں سے جڑے لوگوں کوجلد کوئی متبادل دیا جائےگا۔

اپنی حکومت کےآخری دورمیں یعنی اسمبلی انتخابات سے چندماہ پہلے ایسے اعلان کرنےکا مطلب صاف ہے کہ یہ سیاسی نظریہ سےدیا گیا بیان ہے اور اپنی ہندو مذہبی رہنما کی شبیہ کو مضبوط کرنا اس کا مقصدنظرآتا ہے۔ویسے لوگوں میں یہ بھی سوال کیا جارہاہے کہ نریندر مودی کا وزیراعظم کے لئے انتخاب گجرات ماڈل کے لئے کیا گیا تھا اور گجرات میں شراب پر پابندی ہےتو بی جے پی کی اقتدار والی دیگرریاستوں میں بھی شراب پر پابندی عائد ہونی چاہئے۔

 

یہ بھی کہا جارہا ہے کہ گزشتہ کئی سالوں کے دوران ہندوستان میں مذہبی شدت پسندی میں شدید اضافہ ہواہے اوراس کی وجہ سےسماج میں بےچینی پیدا ہوئی ہے۔اگر کوئی بھی حکومت اپنےفیصلوں میں سماج کی جگہ مذہب کوترجیح دیتی ہےتو اس سے سماج پر منفی اثر پڑتا ہے۔ اگر شراب کو سماج کے لئے برائی سمجھ کراس پر پورے صوبہ میں پابندی عائد ہوتی ہے تو اس کوسماج کےلئےاچھا قدم کہاجا سکتا تھا۔