• 425
    Shares

صنعاء : یمن کی آئینی فوج نے مزاحمتی ملیشیا اور عرب اتحادی فوج کی معاونت سے وسطی گورنری مآرب میں جنوب مغربی مقام رحبہ کے محاذ پر حوثیوں کے خلاف اہم پیش قدمی کرتے ہوئے ایرانی حمایت یافتہ باغیوں سے کئی اہم مقامات چھڑا لیے ہیں۔یمن کی سرکاری فوج کا کہنا ہے کہ رحبہ محاذ پرحوثی باغیوں کو لڑائی کے دوران بھاری جانی اور مالی نقصان سے دوچار کیا گیا ہے۔یمنی فوج کے شعبہ اطلاعات کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ فوج نے مآرب گورنری میں پیش قدمی کرتے ہوئے الکتف، راس السمر اور جبل العلیب کو مکمل طور پر باغیوں سے آزاد کرالیا ہے۔ آزاد کرائے گئے مقامات دفاعی اعتبار سے انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ لڑائی کے دوران حوثی باغیوں کے دسیوں جنگجو اور ان کے کمانڈر ہلاک ہوگئے۔ عرب اتحادی فوج نے حوثیوں کے تین قافلوں پر حملہ کرکے انہیں تباہ کردیا۔ادھر ایک دوسری پیش رفت میں مغربی مآرب میں الکسارہ کے محاذ پر لڑائی کے دوران حوثی ملیشیا کے 22 جنگجو ہلاک اور دسیوں زخمی ہوگئے ہیں۔بیان میں کہا گیا ہے کہ حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں پر گھات لگا کر حملہ کیا جس کے نتیجے میں دشمن کو بھاری جانی نقصان اٹھانا پڑا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔ 


اپنی رائے یہاں لکھیں