ماسکو:روس نے یوکرین کے شہر ماریوپول کی مسجد میں 80 پناہ گزینوں پر حملے کی تردید کر دی۔یوکرین کے وزیر کی جانب سے ماریوپول میں مسجد پر روس کے حملے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ مسجد سلطان سلیمان میں درجنوں بچوں سمیت 80 پناہ گزین موجود تھے۔تاہم روس کی جانب سے ماریوپول میں مسجد سلطان سلیمان پر حملے کی تردید کی گئی ہے

جبکہ مسجد انتظامیہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ روسی راکٹ مسجد سے 700 میٹر دور گرا، راکٹ حملے میں مسجد کو کوئی نقصان نہیں ہوا۔سربراہ مسجد کمیٹی کا کہنا ہے کہ مسجد میں ترک شہری موجود ہیں جو انخلا کے منتظر ہیں۔

خیال رہے کہ روس نے 24 فروری کو یوکرین پر حملوں کا آغاز کیا تھا جس کے بعد سے اب تک سینکڑوں افراد ہلاک، رہائشی اور ملٹری انفرا اسٹرکچر تباہ اور لاکھوں کی تعداد میں افراد بے گھر ہو چکے ہیں۔