لوک سبھا اور اسمبلی چناﺅ ‘ اشوک چوہان نے یہ دعویٰ کردیا

0 11

ناندیڑ۔2دسمبر(نامہ نگار) : ان دنوں ملک کی 5 ریاستوں میں اسمبلی کے چناﺅ ہورہے ہیں۔ عوام میں بی جے پی کے خلاف ناراضگی کا ماحول پیدا ہوچکا ہے۔ عوام کانگریس کو دوبارہ اقتدار سونپنے کی تیاری میںہے۔ کانگریس پارٹی کو لوک سبھا اور اسمبلی چناﺅ میں کامیابی دلانے کے لئے بوتھ ورکرس ابھی سے تیاری میں مصروف ہوجائے۔ اس طرح کا اظہارِ خیال کانگریس کے ریاستی صدر اشوک چوہان نے کیا۔ ناندیڑ جنوب اسمبلی حلقہ کے بوتھ ذمہ داروں کا اہم اجلاس آج شام اوم گارڈن فنکشن ہال میںمنعقد ہوا تھا۔ اس اجلاس میںرکن اسمبلی ڈی پی ساونت‘ وسنت چوہان‘ کانگریس ضلع صدر گوئند ناگیلی کر‘ سابق ایم ایل اے روہی داس چوہان‘ سابق میئر عبدالستار‘ میئر شیلا بھورے‘ ڈپٹی میئر ونئے پاٹل‘ یوتھ کانگریس کے ضلع صدر پپو کونڈیکر‘ شہر صدر وٹھل پاﺅڑے‘ جنوب حلقہ کے صدر عبدالغفار‘ اسٹینڈنگ کمیٹی کے چیئر مین شمیم عبداللہ‘ سینئر کارپوریٹر مسعود احمد خان‘ سمیت کانگریس پارٹی کے کارپوریٹرس‘ ضلع پریشد ممبران‘ شہر و ضلع کمیٹی کے عہدیداران‘ موجود تھے۔DSC_0039

پروگرام کے آغاز پر اسمبلی حلقہ کے انچارج ونئے پاٹل نے بوتھ کمیٹیوں کی تفصیلات پیش کی اور کہا کہ حلقہ میں کانگریس پارٹی کافی مضبوط ہوچکی ہے۔ ضلع پریشد کے رکن منوہر شندے نے کہا کہ موجودہ ایم ایل اے ہیمنت پاٹل پچھلے چناﺅ میں منتخب ہوئے تھے اب وہ دوبارہ اس حلقہ سے منتخب نہیں ہوسکیں گے۔ سابق میئر عبدالستار نے اپنے خطاب میں کہاکہ پچھلے اسمبلی چناﺅ میں مسلم ووٹوں کی تقسیم کے سبب اس حلقہ سے شیو سینا منتخب ہوئی تھی مگر اب مسلم ووٹرس کانگریس کے حق میں ہی اپنے ووٹ کا استعمال کریں گے اور 2009ءکی طرح ضلع میں تمام نشستوں پر کانگریس کا ہی قبضہ ہوگا۔ ڈی پی ساونت نے اپنے خطاب میں کہا کہ پارٹی ورکرس آئندہ چناﺅ کو مد نظر رکھتے ہوئے عوام کے مسلسل رابطہ میں رہیں۔ عوامی مسائل کو حل کرنے کے لئے کوشاں رہیں۔ ناندیڑ شہر میں کانگریس پارٹی نمبر ون پوزیشن پر ہے ۔ اسے آئندہ بھی برقرار رکھیں۔ کانگریس کے ریاستی صدر اشوک چوہان نے اپنے خطاب میں کہا کہ کانگریس صدر راہول گاندھی کی ہدایت پر ایک بوتھ20 یوتھ کا نعرہ دے کر ہر بوتھ پر کانگریس پارٹی کے ورکرس کو ذمہ داریاں سونپی جارہی ہے۔ بوتھ کمیٹیوں کے ذمہ داران راست ووٹرس تک پہنچ کر کانگریس کی پالیسی کو اُن تک پہنچائیں۔ موجودہ مرکزی اور ریاستی حکومت کی ناکامیوں کا پردہ فاش کرتے ہوئے عوام کو دوبارہ سے کانگریس کی طرف منسلک کرنے کے لئے کوشا ں رہیں۔ مستقبل میں مرکز اور ریاست میں کانگریس پارٹی کو ہی ا قتدار حاصل ہوگا۔ اس طرح کا دعویٰ اشوک چوہان نے کیا۔ انہوں نے کہا کہ مہاراشٹر میں مراٹھا ریزرویشن منظور ہوا ہے جو مراٹھا سماج کے احتجاجوں کا نتیجہ ہے۔ ریاستی حکومت نے دھنگر اور مسلمانوں کو ابھی تک ریزرویشن فراہم نہیں کیا ہے۔ کانگریس پارٹی نے اپنے دورِ اقتدار میںمسلمانوں کو ریزرویشن فراہم کیا تھا اور آئندہ حکومت آنے پر کانگریس پارٹی ریزرویشن مسلمانوں کو فراہم کرائے گی۔ پروگرام کی نظامت ترجمان سنتوش پانڈاگڑے نے کی اور اختتام پر شرینیواس مورے نے شکریہ ادا کیا۔