اورنگ آباد: یکم۔ مئی(ورق تازہ نیوز) مسجد پر لاوڈاسپیکر کوئی مذہبی موضوع نہیں ہے۔ وہ سماجی ہے۔ تاہم ایم این ایس کے سربراہ راج ٹھاکرے نے ان لوگوں کو سیدھا انتباہ دیا جو سمجھتے ہیں کہ یہ مذہبی مسئلہ ہے تو ہم مذہب کا جواب دیں گے۔ وہ اورنگ آباد میں ایک اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔

3 مئی کوعید ہے۔ میں اس تہوار کو برباد نہیں کرنا چاہتا۔ لیکن میں 4 تاریخ سے نہیں سنوں گا۔ جہاں بھی مساجد پر لاوڈاسپیکرہوں گے وہاں لاو¿ڈ اسپیکر پرتیز آوازمیں ہنومان چالیسہ چلائی جائے گی۔ اگر وہ درخواست نہیں سمجھتا ہے تو ہمارے پاس کوئی چارہ نہیں ہے، ایسے الفاظ میں راج نے سیدھی وارننگ دے دی۔

جب راج اپنی تقریر کر رہا تھا، مسجد سے اذان کی آواز سنائی دے رہی تھی۔ راج نے تب جارحانہ انداز اختیار کرلیااور آگ بگولہ ہوگئے ۔ مجھے نہیں معلوم کہ ریاست میں کیا ہوگا ۔راج نے اگر وہ سادہ لفظوں میں نہیں سمجھتے، تو پھر دو۔د و ہاتھ کرلیںگے ۔