لاپرواہی برتنے والے ہوشیار: ناندیڑ میں کورونا قوانین پر سختی سے عمل نہ کرنے پر کوچنگ کلاسیس کو جرمانہ

0 3

شہر میں مبینہ کوچنگ کلاسز کے ڈائریکٹر سمیت کئی افراد پر جرمانے

ناندیڑ: 13 جنوری (ورق تازہ نیوز) شہر میں کوچنگ کلاسز کے ذریعہ کورونا قوانین کی دھجیاں اڑائی جارہی ہے۔ پیسے کے زور پر کچھ بھی کرنے کو تیار رہنے والی کوچنگ کلاسز یہ ظاہر کرتی ہیں کہ وہ انتظامیہ کے احکامات ماننے کو تیار نہیں۔

ناندیڑ میں ایک چونکا دینے والی تصویر سامنے آئی ہے کہ کچھ کوچنگ کلاسز چلانے والے طلباء کی زندگیوں سے کھیل رہے تاکہ سینکڑوں طلباء سے کروڑوں روپے کی وصولی ڈوب نہ جائے۔ یہ بہانہ بنا کر کہ ہم یہ سب طلبہ کے مستقبل کے لیے کر رہے ہیں، ان کلاسز کے ڈائریکٹر وں نے طلبہ کی جانوں سے کھیلنا شروع کر دیا ہے۔ حیرت کی بات یہ ہے کہ اس میں قومی سطح پر خود ساختہ ٹاپرز کے ساتھ کوچنگ کلاس کے مالکان بھی شامل ہیں۔

کلکٹر نے ضلع کے لیے نئے کورونا قوانین کا اعلان کیا ہے۔ 13 جنوری کو ضلع کلکٹر ڈاکٹر۔ وپن ایتنکر کے حکم سے شہر میں آر سی سی کوچنگ کلاسز کو 50,000 روپے، سلگھرے کوچنگ کلاسز کو 50,000 روپے جرمانہ کیا گیا۔

کمشنر ڈاکٹر سنیل لہانے کی رہنمائی میں اور ایڈیشنل کمشنر بابا صاحب منوہرے کے کنٹرول میں، ایڈیشنل کمشنر گریش کدم، ڈپٹی کمشنر اجیت پال سنگھ سندھو، علاقائی افسران ون ٹو سکس سنجے جادھو، ڈاکٹر۔ مرزا فرحت اللہ بیگ، رمیش چاورے، ڈاکٹر۔ رئیس الدین، راوانہ سونسلے، انواش اٹکور اور ساہا۔ کمشنر سدھیر انگولے کی ٹیم نے آپریشن میں حصہ لیا۔

میونسپل کارپوریشن نے شہر کے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ وقتاً فوقتاً کورونا رولز کی ہدایات پر عمل کریں۔