اختیارات اور عوامی مالیہ کے مبینہ بیجا استعمال کا الزام
تحقیقات جاری، وزیرتجارت و صنعت کو مالیات کے قلمدان کی زائد ذمہ داری

دوحہ : قطر کے وزیرمالیات علی شریف العمادی کو اختیارات اور عوامی مالیہ کا مبینہ طور پر بیجا استعمال کرنے کی پاداش میں گرفتار کیا گیا۔ ریاستی میڈیا نے جمعرات کو یہ بات بتائی۔ بعدازاں قطر کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے بھی ایک رپورٹ شائع کرتے ہوئے اس بات کی توثیق کی کہ ملک کے حکمراں امیر شیخ تمیم بن حمدالتہانی کے خلاف حکم جاری کرتے ہوئے انہیں عہدہ سے برطرف کردیا جبکہ وزیر برائے تجارت و صنعت علی بن احمد الکواری کو یہ ہدایت بھی دی گئی ہیکہ موصوف وزارت مالیات کی زائد ذمہ داری بھی سنبھالیں۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہیکہ ماضی میں بھی قطر میں بدعنوانیوں پر اعلیٰ سطحی گرفتاریاں ہوچکی ہیں۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ عمادی اس سلسلہ میں اعلیٰ ترین شخصیت تصویر کئے جارہے ہیں جن پر بدعنوانی کا الزام ہے اور ان کی گرفتاری عمل میں آئی ہے۔ اٹارنی جنرل نے وزیر مالیات کی گرفتاری کا حکم جاری کیا اور ان سے اختیارات کے بیجا استعمال اور بدعنوانیوں میں ملوث ہونے سے متعلق پوچھ گچھ کی جائے گی۔ قطر خبر رساں ایجنسی کا یہ بھی کہنا ہیکہ اس سلسلہ میں پوچھ گچھ کا آغاز ہوچکا ہے لیکن ایجنسی نے کوئی تفصیل نہیں بتائی۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہیکہ عمادی 2013ء سے وزیرمالیات کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔ اس کے علاوہ موصوف سرکاری ایئرلائنز قطر ایرویز کے ایگزیکیٹیو بورڈ کے صدر اور بورڈ آف قطر نیشنل بینک کے صدرنشین بھی تھے۔ بتایا جاتا ہیکہ ان کا تعلق یوں تو شاہی خاندان سے نہیں تھا لیکن وہ ایک انتہائی معزز اور خوشحال گھرانے سے تعلق رکھتے تھے اور انہوں نے ملک میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کی تھی۔ خصوصی طور پر تجارت اور ریئل اسٹیٹ میں ان کا اچھا خاص دبدبہ تھا۔ 2022ء میں قطر عالمی فٹبال کپ کا میزبانی کررہا ہے اور اس سلسلہ میں بھی مسٹر عمادی کا اہم رول رہا ہے۔ واضح رہیکہ گیس کے ذخائر سے مالا مال قطر عرب خطہ کا سب سے چھوٹا ملک ہے جس کی مجموعی آبادی 2.8 ملین نفوس پر مشتمل ہے جن میں اکثریت غیرملکیوں کی ہے۔ جون 1995ء میں امیر شیخ خلیفہ بن حمدالتہانی کو ان کے بیٹے نے ایک غیرخونیں بغاوت میں اقتدار سے بیدخل کردیا تھا جو موجودہ امیر شیخ حمد بن خلیفہ التہانی کے والد ہیں۔


اپنی رائے یہاں لکھیں