ٹوکیو۔ پاکستانی نژاد جاپانی فٹبالر محمد سمیع یاماگوچی کے جاپان کی قومی ٹیم میں شمولیت کے امکانات روشن ہیں اوراخبارات میں محمد سمیع یاماگوچی کی مقبولیت میں اضافہ ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق جاپان میں 16 سالہ پاکستانی نژاد جاپانی شہری محمد سمیع یاماگوچی جاپان کے مقبول ترین کھیل فٹبال میں تیزی سے مقبولیت حاصل کر رہے ہیں جو ناصرف جاپان کی مقامی لیگ میں بہترین کارکردگی دکھا کر جاپانی اخبارات میں سرخیاں بنا رہے ہیں بلکہ عالمی شہرت یافتہ کلب بل مورے میں بھی جگہ بنا چکے ہیں۔

حال ہی میں جاپان کی صوبائی لیگ میں اپنی ٹیم کو اپنے بہترین کھیل اور شاندارگول کے ذریعہ کاناگاواکین کی نمبر ون ٹیم بنانے والے محمد سمیع یاماگوچی کو ٹیم کا اہم ترین کھلاڑی قرار دیا گیا ہے۔ جاپانی ماہرین محمد سمیع یاماگوچی کو مستقبل میں جاپان کے قومی ٹیم کے کھلاڑی کے طور پر بھی دیکھ رہے ہیں۔

محمد سمیع یاماگوچی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ جب بھی گراو¿نڈ میں داخل ہوتے ہیں تو اپنے والد کی ہدایات کے مطابق اللّٰہ اکبرکا نعرہ لگا کر داخل ہوتے ہیں اور جتنی محبت وہ جاپان سے کرتے ہیں اتنی محبت وہ پاکستان سے بھی کرتے ہیں۔ محمد سمیع صرف 16 برس کی عمر میں 6 فٹ 2 انچ قد کے حامل ہیں اور اُن سے نہ صرف جاپانی عوام کو بلکہ پاکستان کو بھی بہت سی توقعات وابستہ ہیں۔