صنعاء: اتحادی قوتوں کے جنگی طیاروں نے معارب کے سرواھح قصبے پر 24 بار جبکہ رغوان اور میدغال قصبوں میں 5 حملے کیے جس کے نتیجے میں 26 عسکریت پسندوں کے ہلاک ہونے کا دعوی کیا گیا ہے ۔ ترکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق یمنی فوج اور سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحادی قوتوں اور ایرانی حمایت یافتہ حوثیوں کے درمیان معریب شہر میں ہونے والی گھمسان کی جنگ میں 26 حوثی عسکریت پسند مارے گئے ۔فوج سے منسلک تھرڈ ریجنل میڈیا سنٹر کی جانب سے جاری کردہ تحریری بیان کے مطابق حوثیوں نے معریب شہر کے مغربی قصبے سارواح قصبے میں فوج کے زیر کنٹرول ٹھکانوں پر حملے کیے ۔طرفین کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں 26 حوثی عسکریت پسند ہلاک ہو گئے ۔دوسری جانب حوثیوں سے منسلک الا مصیرہ ٹیلی ویژن چینل نے مطابق اتحادی قوتوں کے جنگی طیاروں نے معارب کے سرواھح قصبے پر 24 بار جبکہ رغوان اور میدغال قصبوں میں 5 حملے کیے ۔معریب شہر میں گھمسان کی جنگ جاری ہے تو یمنی وزیر اعظم معین عبدالملک نے اقوام متحدہ اور عالمی برادری سے کی گئی اپیل میں ایران کے خلاف باز رکھنے والے اقدامات اٹھانے کی اپیل کی۔یمنی سرکاری خبر ایجنسی کی خبر کے مطابق عبدل الملک نے ایران پر یمن کی جنگ کو جاری رکھنے پر مصر ہونے کا الزام عائد کیا ہے ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں