عید سے قبل پرچم لہرانے اور لاؤڈ سپیکر لگانے پر ہنگامہ، لاٹھی چارج کے بعد انٹرنیٹ خدمات بند

راجستھان میں جودھپور شہر کے جلوری گیٹ چوراہے پر عید کے موقع پر زبردست ہنگامہ ہوا۔ آج تک نیوز پورٹل پر شائع خبر کے مطابق شرپسندوں سے نمٹنے کے لیے پولیس کو لاٹھی چارج کرنا پڑا اور آنسو گیس کے گولوں کا بھی استعمال کرنا پڑا ۔ احتیاطی تدابیر کے طور پر پورے ضلع اور شہر میں انٹرنیٹ بند کر دیا گیا ہے اور حساس علاقوں میں پولیس کی بھاری نفری تعینات کر دی گئی ہے۔

دراصل یہ تنازعہ شہر کے جلوری گیٹ چوراہے پر مجاہد آزادی بال مکند بسا کے مجسمہ پر جھنڈا لگانے اور چوراہے پر عید سے متعلق بینرز کو لے کر شروع ہوا تھا۔ اس کے علاوہ مشتعل افراد عید کی نماز کے لیے چوراہے تک لاؤڈ اسپیکر لگانے کے لیے جمع ہوگئے۔

اس دوران غیر مسلموں نے نعرے لگائے اور جھنڈے اور بینرز اتار دیئے۔ اس دوران اس کی مخالفت بھی ہوئی۔ اسی دوران دوسری جانب کے لوگ بھی سرگرم ہو گئے اور چوراہے پر کئی گاڑیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔ پھر پتھراؤ ہوا۔ یہاں پولیس نے شرپسندوں کو قابو کرنے کے لیے ہلکی طاقت کا بھی استعمال کیا۔

جلوری گیٹ سے عیدگاہ روڈ تک پولیس نے آنسو گیس کے گولے داغے۔ اچانک بڑی تعداد میں دستے تعینات کر دیے گئے۔ دونوں طرف کے لوگ جمع ہو گئے۔ پولیس نے رات گئے پورے علاقے کو لوگوں سے خالی کرا لیا۔