عمران خان پر قاتلانہ حملہ کا ویڈیو آیا سامنے

10,058

گوجرانوالہ میں لانگ مارچ کے دوران چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان قاتلانہ حملے میں گولی لگنے سے زخمی ہوگئے۔پولیس کے مطابق گوجرانوالہ میں اللہ والا چوک میں پی ٹی آئی کےاستقبالیہ کیمپ میں فائرنگ کی گئی جس سے علاقے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا اور بھگدڑ مچ گئی جب کہ موقع پر موجود سکیورٹی اہلکاروں نے حملہ آور کو فوری طور پر حراست میں لے لیا۔

اللہ والا چوک پر فائرنگ کےبعد سکیورٹی اہلکار فوری طور پر عمران خان کے پاس پہنچ گئے اور انہیں حصار میں لے کر بلٹ پروف جیکٹ ان کے سامنے کردیے تاہم چیئرمین پی ٹی آئی گولی لگنے سے زخمی ہوئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ عمران خان کی سیدھی ٹانگ میں گولی لگی ہے جب کہ پی ٹی آئی رہنما فیصل جاوید بھی زخمی ہوئے ہیں، اس کے علاوہ احمد چٹھہ اور چوہدری محمد یوسف بھی زخمی ہیں۔

پی ٹی آئی رہنما اسد عمر نے نیوز چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فیصل جاوید کو گولی لگی ہے اور احمد چٹھہ شدید زخمی ہوئے ہیں۔

اسد عمر نے کہا کہ فائرنگ سے مجموعی طور پر 6 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق حملہ آور نے پہلے برسٹ چلایا پھر ایک گولی چلائی، حملہ آور نے کالے رنگ کے کپڑے پہن رکھے تھے۔

مقامی ٹی وی کیمرامین نے کیا دیکھا؟

فرقان الٰہی، بی بی سی اردو

مقامی ٹی وی چینل پبلک نیوز کے کیمرامین توصیف اکرم نے بتایا ہے کہ وہ عمران خان کا انٹرویو کرنے جانے والے تھے لیکن اس سے قبل وہ پی ٹی آئی رہنما اسلم اقبال کا انٹرویو کرنے لگے تھے کہ اسی وقت فائر ہوا۔

اُنھوں نے کہا کہ وہ آگے گئے تو دیکھا کہ لوگ عمران خان کو اٹھا رہے تھے ان کی ٹانگ میں گولی لگی ہوئی تھی۔

اُنھوں نے بتایا کہ جو جو لوگ قریب تھے وہ سب خون میں لت پت تھے اور اُنھوں نے کنٹینر پر دو گولیوں کے نشانات بھی دیکھے۔
توصیف اکرم نے بتایا کہ پھر وہ لوگ عمران خان کو نیچے لے کر گئے اور اُنھیں ایمبولینس کے بجائے ان کی اپنی گاڑی میں ڈالا اور وہاں سے لے کر چلے گئے۔