عمان۔ عمان کے سلطان ہیثم بن طارق 11 جولائی کو سعودی عرب کا دورہ کریں گے۔ جس کی دعوت سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبد العزیز نے دی۔ اقتصادی تجزیہ کار عبد الرحمن الجبیری نے بتایا کہ سلطان ہیثم بن طارق کا مملکت کا حالیہ دورہ اقتصادی سطح پر بڑی اہمیت کا حامل ہے۔ یہ دونوں ملکوں کے اہداف کے کام آئے گا اور دنوں ملکوں کی قیادت اور عوام کی امیدوں اور توقعات کو پورا کرے گا۔ الجبیری کے مطابق دونوں ملکوں کے بیچ اقتصادی تعلقات نئے اْفق کی جانب بڑھ رہے ہیں جس کو مشترکہ حکمت عملی کا ویژن مضبوط بنا رہا ہے۔ اس کا مقصد مختلف شعبوں میں مشترکہ اقتصادی پروگراموں کی سطح کو بڑھانا ہے۔ ان میں دیرپا ترقی اور باہمی سرمایہ کاری کے اہداف نمایاں ترین ہیں۔
الجبیری نے بتایا کہ آخری دس برسوں کے دوران میں سعودی عرب اور سلطنت عْمان کے درمیان سالانہ تجارتی تبادلے کا حجم دو گنا ہو گیا ہے۔ سال 2008ء میں یہ حجم 4.4 ارب ریال سے تجاوز نہیں کر سکا جب کہ 2017ء میں یہ بڑھ کر 9 ارب ریال تک پہنچ گیا۔ اس طرح آخری دس برسوں میں (2008-2017) تجارتی حجم کی مجموعی مالیت میں 105% اضافہ ہوا اور اس کی مجموعی مالیت 86 ارب ریال ہو گئی۔ رواں سال 2021ء کی پہلی سہ ماہی میں دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تبادلے کا حجم تقریبا 2.152 ارب سعودی ریال تھا۔ عمْان کے لیے سعودی عرب کی نان آئل برآمدات کی قیمت 1.16 ارب ریال رہی۔ واضح رہے کہ سلطان ہیثم بن طارق کا سعودی عرب کا یہ دورہ جنوری 2020ء میں اقتدار سنبھالنے کے بعد کا پہلا غیر ملکی دورہ ہے۔


اپنی رائے یہاں لکھیں