• 425
    Shares

طالبان نے امریکا کو ایک ہفتے میں افغانستان سے نکلنے کی وارننگ دے دی۔ترجمان طالبان نے کہا ہے کہ ایک ہفتے میں امریکی فوج افغانستان سے نہ نکلی تو نتائج بھگتنے کو تیار رہے۔طالبان نے یہ بھی کہا کہ جب تک ایک بھی امریکی فوج افغان سرزمین پر موجود ہے، اس وقت تک حکومت نہیں بنائی جائے گی۔

 

ترجمان طالبان سہیل شاہین نے کہا کہ31 اگست کے بعد غیر ملکی افواج کے افغانستان میں رکنے کا مطلب قبضے میں توسیع سمجھا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ افغانستان سے بھاگنے کی وجہ خوف نہیں ہے۔دوسری جانب امریکی محکمہ دفاع نے افغانستان سے فوجی انخلا کی 31 اگست کی ڈیڈلائن میں توسیع کا اشارہ دے دیا۔ترجمان پینٹاگون جان کربی نے کہا ہے کہ کابل ایئرپورٹ سے لوگوں کو نکالنے کی کوشش کررہے ہیں، انخلا کی ڈیڈلائن بڑھانے کا جائزہ لیں گے۔

اس سے پہلے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے کہا تھا کہ وہ جی سیون اجلاس میں امریکا سے مطالبہ کریں گے کہ افغانستان سے فوجی انخلا کی ڈیڈلائن 31 اگست سے بڑھائی جائے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔