ضلع کے 50 ہزار سرکاری افسران و ملازمین کی طرف سے  ڈیڑھ لاکھ غریب خاندانوں میں ترنگا تقسیم کاآغاز

196

ناندیڑ:5اگست (ورق تازہ نیوز)ہندوستان کی آزادی کے امرت جوبلی سال کے موقع پر ناندیڑ ضلع نے "ہرگھر ترنگا” مہم کے لیے تخلیقی سرگرمیاں شروع کرتے ہوئے عوامی شرکت کو ترجیح دی ہے۔ حکومت کے تقریباً 50,000 اہلکار اور ملازمین تقریباً ڈیڑھ لاکھ ترنگا تین تین کی شکل میں تقسیم کر رہے ہیں، تاکہ ضلع کے غریب خاندان بھی عزت نفس کے ساتھ اپنے گھروں پر ترنگا لہرا سکیں۔

اس کا آغاز آج کلکٹر آفس میں ڈاکٹر شنکراو¿ چوہان ڈسٹرکٹ پلاننگ بلڈنگ میں کیا گیا۔اس موقع پر کلکٹرضلع کلکٹر ڈاکٹر وپن ایتنکر، ضلع پریشد کی چیف ایگزیکٹیو آفیسر ورشا ٹھاکر-گھوگے، میونسپل کمشنر ڈاکٹر سنیل لہانے، رہائشی ڈپٹی کلکٹر پردیپ کلکرنی، ڈپٹی کلکٹر انورادھا دھولکاری، ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفیسر ونود راپٹوار، ڈسٹرکٹ مراٹھی جرنلسٹ یونین کے خزانچی وجے جوشی، ایڈیٹر الطاف ثانی، پردیپ ناگاپورکر، الیکٹرانک میڈیا اور دیگر نمائندے موجود تھے۔

کلکٹر نے کہاکہ ہم نے جان بوجھ کر ترنگا تقسیم کرنے اور ترنگا بیچنے کی ذمہ داری ضلع میں بچت گروپوں کو دی ہے۔ ہم ان کے ذریعے تقریباً ڈیڑھ لاکھ ترنگے لے رہے ہیں۔ ہم انہیں ضلع کے مختلف سرکاری دفاتر کے علاقوں میں ترنگا بیچنے کے لیے جگہ بھی دے رہے ہیں۔ مقصد ان کی بالواسطہ مدد کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترنگے سے متعلق حکومت کی ہدایات اور قواعد سب کو دے دیے گئے ہیں۔میڈیا کے نمائندے اس اقدام کے لیے اپنی ذمہ داری کو احسن طریقے سے نبھانے کے لیے تیار ہیں۔ ہم اس سرگرمی میں زیادہ سے زیادہ لوگوں کی شرکت کے لیے وسیع تشہیر پر زور دیں گے۔