صبح بھیگی ہوئی انجیر کھانا کیوں ضروری؟

8

انجیر ایک لذیذ خشک پھل ہے، خشک انجیر کو موسم سرما میں ایک بہترین ناشتہ سمجھا جاتا ہے، اس میں وٹامنز، معدنیات اور اینٹی آکسیڈنٹس کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔ماہرین کہتے ہیں کہ صرف تین سے چار انجیر رات کو آدھا کپ پانی میں بھگو دیں اور رات بھر بھگو کر رکھ دیں، اسے اگلی صبح خالی پیٹ کھائیں اور پھر اپنی صحت پر اس کے بےشمار فوائد دیکھیں۔

بھیگے ہوئے انجیر کھانے کے فوائد:

صبح بھیگی ہوئی انجیر کھانا کیوں ضروری؟
انجیر میں پوٹاشیم کی زیادہ مقدار ہوتی ہے جو آپ کے جسم میں شوگر کی سطح کو کنٹرول کرتی ہے۔ کئی مطالعات سے پتا چلا ہے کہ انجیر میں موجود کلوروجینک ایسڈ خون میں شوگر کی سطح کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ بھیگی ہوئی انجیر کھانے سے ٹائپ II ذیابیطس میں خون میں گلوکوز کی سطح کو بھی کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔ آپ سلاد، اسموتھیز، کارن فلیکس یا دودھ میں کٹے ہوئے انجیر کو شامل کرکے اپنی خوراک میں شامل کرسکتے ہیں۔

قبض کے مسائل کو ختم کرتی ہے:انجیر میں فائبر ہوتا ہے جو آنتوں کی باقاعدہ حرکت کو برقرار رکھنے میں مدد کرتا ہے۔ جو لوگ وقتاً فوقتاً قبض سے نمٹتے ہیں وہ اس سے بچنے اور صحت مند آنت کو برقرار رکھنے کے لیے اپنی خوراک میں انجیر کو شامل کر سکتے ہیں۔

وزن کم کرنے میں مدد کرتی ہے:اگر آپ وزن کم کرنے والی غذا پر عمل کر رہے ہیں تو انجیر کو آپ کے ڈائٹ چارٹ میں بھی شامل کیا جا سکتا ہے۔ فائبر سے بھرپور غذائیں وزن کم کرنے کے لیے ضروری ہیں اور انجیر آپ کے جسم کو فائبر کی اچھی مقدار فراہم کرتی ہے۔

قلبِ صحت کیلئے مفید:انجیر میں موجود اینٹی آکسیڈنٹس بلڈ پریشر کی سطح کو کنٹرول کرتے ہوئے جسم سے فری ریڈیکلز کو ختم کرنے میں مدد دیتے ہیں۔ کچھ مطالعات سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ انجیر جسم میں ٹرائگلیسرائیڈز کی سطح کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتی ہے جو دل سے متعلق مسائل کی ایک بڑی وجہ ہے۔

مضبوط ہڈیاں:انجیر کیلشیم کی اچھی خوراک فراہم کرکے آپ کی ہڈیوں کو صحت مند رکھنے میں مدد کرتی ہے۔ ہمارا جسم خود کیلشیم پیدا نہیں کرتا جس کی وجہ سے ہمیں دودھ، سویا، سبز پتوں والی سبزیاں اور انجیر جیسے بیرونی ذرائع پر انحصار کرنا پڑتا ہے۔