اردھاپور ( شیخ زبیر ) شہر میں بڑھتے کرونا کے مریضوں کی تعداد اور روز ہورہی اموات کے پیش نظر جماعت اسلامی ہند اور مقامی معززین شہر نے عوامی بیداری کے لیے ایک ہینڈ بل تیار کیا اور اسے گھر گھر پہنچایا گیا ۔اس ہینڈ بل میں عوام لناس سے اپیل کی گئی کے وہ احتیاط اور حفاظتی اقدمات کا خیال رکھیں اور وقت پر تشخیص اور وقت پر علاج کرکے

اس مہاماری کا مقابلہ کریں ۔ساتھ ہی اس بات کی ۰بھی اپیل کی کہ ٹائفائیڈ کے نام پر سلائین لگا کر بیماری کو نہ بڑھائیں اور نہ پھیلائیں ۔ سونے پر سہاگہ شہر میں کچھ کمپاوڈر قسم کے لوگوں نے بے دھڑک دواکانے کھول کر ٹائیفائیڈ کے نام پر سلائین اور انجکشن کا سلسلہ شروع کردیا ہے جو کرونا کے تیزی سے پھیلنے کا سبب بنا ہے ۔اس ہینڈ بل میں درج ذیل افراد نے اپیل کی ہے ۔

سمیرہ بیگم شیخ لائق (صدر بلدیہ اردھاپور )، ماروت راو جگتاپ (سی او نگر پنچایت اردھاپور )، ڈاکٹر ذاکر انعامدار (سیکریٹری میڈیکل ایسو سی ایشن)، عبداللہ خان (امیر مقامی جماعت اسلامی ہند) ،پلوی وشال لنگڑے(نائب صدر بلدیہ اردھاپور)،ناصر خان پٹھان (سابق صدر بلدیہ اردھاپور )، مرزا اختر اللہ بیگ (پپو)(سابق سبھا پتی پنچایت سمیتی اردھاپور )، ایڈوکیٹ کشور دیشمکھ (حزب مخالف لیڈر نگر پنچایت )، وشنو کانت گٹے(پولس انسپکٹر اردھاپور)، مرزا عصکر اللہ بیگ(خادم الحجاج اردھاپور)
یہ ہینڈ بل اس طرح ہے ۔
COVID-19 اور ہماری ذمہ داریاں
آئے دن لوگ مر رہے ہیں ،حالات بد سے بد تر ہوتے جارہے ہیں ایسے میں لوگوں کو احتیاطی تدابیر کے ساتھ کچھ اہم باتیں جان کر اس پر عمل کرنا ضروری ہے۔آئیے اس جان لیوا مرض کی روک تھا میں اپنا ہاتھ بٹائیں ۔

1 بھیڑ بھاڑ والی جگہوں سے پرہیز کریں۔شادی بیاہ اور دیگر تقاریب سے پرہیز کریں۔2 دوستوں سے دیر رات گپ شپ لڑاتے نہ بیٹھیں اس کے بجائے ان سے فون پر رابطہ میں رہیں۔3 ہاتھ اچھی طرح دھوئیں ناک منہ آنکھوں کو بار بار ہاتھ نہ لگائیں۔4 ماسک کا استعمال کریں ،سوشل ڈسٹنسنگ کا خیال رکھیں۔5 سردی زکام بخار ہو تو بغیر ماسک کسی سے نہ ملیں ہوسکتا ہے کہ آپ اس وائرس کا شکار ہوں اور انجانے میں دوسروں کو متاثر کردیں۔6:-احتیاطی تدابیر کو مذاق میں نہ اڑائیں یہ خودکشی ہوگی آپ کو اگر اپنی جان پیاری نہیں تو سماج ،معاشرے اور غریب غربا کا خیال رکھیں آپ کی نادانی کا خمیازہ انہیں بھگتنا پڑے گا۔7 overاسمارٹ بن کر بیماری نہ پھیلائیں۔8 سانس لینے میں دقت ہو تو گھبرائیے نہیں PHC(اسرکاری اسپتال)جاکر اپنی جانچ کرائیں وقت پر تشخیص اور وقت پر صحیح علاج اس جان لیوا بیماری سے بچا سکتا ہے ۔9 ٹائفائیڈ کے نام پر سلائین لگاتے نہ پھریں اگر درج ذیل علامات ہیںتو فوری صحیح علاج کرائیں ۔(ا۔سردی کھانسی ،ب۔بخار،ج۔سانس لینے میں تکلیف ،ت۔شدید بدن درد،ک۔منہ کڑوا ہوجانا ،کسی چیز کا مزہ ،بو نہ آنا،ل۔الٹی سنڈاس)10 85فیصد لوگوں کے لیے COVID-19ایک معمولی فلو ہے لیکن جن کا مدافعتی نظام کمزور ہے ایسے 15فیصد لوگ اس سے شدید متاثر ہوسکتے ہیں ۔11 ویکسن ضرور لیں ،جن کو بی پی شوگر یا دیگر بیماریاں ہے ان کے لیے تو یہ ٹیکے لینا لازمی ہے ۔12 کرونا کی ویکسن بالکل محفوظ ہے اس کا کوئی نقصان نہیںاور اس جان لیوا بیماری سے بچاو کا واحد ذریعہ ہے ۔13 افواہوں پر دھیان نہپ دیں وہاٹس اپ پر آنے والے ٹوٹکے اور جھوٹی خبروں کو نہ پھیلائیں ،کچھ جاہل قسم کے لوگ بیماری کا انکار کرکے یا ویکسن کے بارے میں غلط فہمی 14 پھیلا کر۔ آپ کا اور سماج کا نقصان کر رہے ہیں ان پر دھیان نہ دیں یہ سماج کے خیر خواہ نہیں سماج کے دشمن ہیں ۔15 بھوندوں حکیموں ،کمپاوڈر ،بغیر ڈگری کے خود ساختہ ڈاکٹروں کے چکر میں پڑ کر اپنا وقت اور پیسہ برباد نہ کریں ،یہ نیم حکیم آپ کے لیے وبال جان بن سکتے ہیں ۔16 وبائی بیماری کے دور میں اپنے ڈاکٹر سے سلائین کا اصرار نہ کریں اس سے کچھ نہیں ہوتا ہے ۔17 اپنے گھروں سے باہر نہ نکلیں ،ضروی کام ہو تو ہی گھر سے باہر نکلیں بال بچوں کے ساتھ گھروں می محفوظ رہیں۔18 ماسک صرف اس وقت لگائیں جب آپ کسی سے مل رہے ہوں ،گھروں میں یا اکیلے میں ماسک کی ضرورت نہیں ہے ۔19 اپنے پڑوسیوں غریبوں ،بے سہارا لوگوں کا خیال رکھیں یہ آپ کی سماجی ذمہ داری ہے ۔20 گھروں پر عبادات کا اہتمام کریں اور اپنے رب سے اس بیماری سے نجات کے لیے دعائیں مانگیں ۔
یاد رکھیے آپ خود سے اس دنیا میں نہیں آئے ہیں اور نہ ہی آپ کی زندگی آپ کے ہاتھ میں ہے اس لیے ڈر اور خوف کو اپنے د ل سے نکال دیں نہ تو بیماری سے ڈریں اور نہ ہی اسے ہلکے میں لیں خوش و خرم رہیں اور احتیاط کا دامن تھامیں رکھیں ۔