ماسکو:یوکرین کے معروف پاپ گلوکار اینڈی کارٹ رائٹ کو اس کی بیوی نے موت کے گھاٹ اتار کر اس کی لاش کے 15ٹکڑے کیے اور انہیں فریزر میں رکھ دیا تھا . پولیس نے اب قتل کی اس گھناﺅنی واردات کی وجہ بھی بتا دی ہے .

ڈیلی سٹار کے مطابق 30سالہ اینڈ ی کارٹ رائٹ اپنی 36سالہ بیوی مرینا کے ساتھ روسی شہر سینٹ پیٹرزبرگ میں رہتا تھا. مرینا نے اسے قتل کرکے اس کی لاش کے ٹکڑے کیے اور ان ٹکڑوں کو واشنگ مشین میں دھو ک خون اچھی طرح صاف کیا. اس کے بعد ملزمہ نے ان ٹکڑوں کو نمک لگا کر الگ الگ شاپنگ بیگز میں ڈال کر فریزر میں رکھ دیا اور لوگوں میں افواہ پھیلا دی کہ گلوکار لاپتہ ہو گئے ہیں.

پولیس نے اینڈی کی لاش کے ٹکڑے برآمد کرنے کے بعد مشتبہ جانتے ہوئے مرینا کو گرفتار کر لیا. پولیس کا کہنا ہے کہ مبینہ طور پر اینڈی مرینا کو طلاق دے کر کسی اور خاتون کے ساتھ شادی کرنے والا تھا، جس کا علم مرینا کو ہو گیا اور اس نے اسے قتل کر دیا. تاہم مرینا کا کہنا ہے کہ اینڈی کی موت نشے کی زیادتی کی وجہ سے ہوئی. اس کی موت کے بعد اس نے اس کے جسم کے ٹکڑے کیے اور فریزر میں رکھ دیئے تاکہ منشیات سے اس کی موت ہونے کی شرمندگی سے بچ سکے. مرینا کا کہنا تھا کہ ”میں نہیں چاہتی تھی کہ اینڈی کے مداحوں کو علم ہو کہ وہ منشیات کی لت میں مبتلا تھا اور اسی وجہ سے موت کے منہ میں چلا گیا.“مگر پوسٹ مارٹم رپورٹ میں اینڈی کے جسم میں منشیات کی موجودگی کا کوئی سراغ نہیں ملا بلکہ پتا چلا ہے کہ اس کے جسم میں انسولین کی حامل دوا انجکشن کے ذریعے داخل کی گئی تھی جس سے وہ بے ہوش ہو گیا.