سی بی آئی نے فوج کی بھرتی گھوٹالہ کیس میں چھ لیفٹیننٹ کرنلوں کے علاوہ کئی دیگر افسران اور انکے کنبہ کے بہت سے دوسرے افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے جس میں سی بی آئی نے3 سے زائد ریاستوں پر چھاپہ مارا ہے سی بی آئی نے بدعنوانی کی روک تھام کے قانون اور فوجداری سازش کے تحت مقدمہ درج کیا۔لیفٹیننٹ کرنل میجر جیسے عہدے کے افسران بھی آرمی ہیڈ کوارٹر کی جانب سے سی بی آئی کو دی گئی شکایت میں شامل ہیں۔ابھی بھی ایک درجن سے زائد مقامات پر تفتیشی ایجنسی کے چھاپے جاری ہیںسی بی آئی نے سروس سلیکشن بورڈ مراکز کے ذریعہ فوج میں افسران کی بھرتی میں مبینہ بدعنوانی کے الزام میں لیفٹیننٹ کرنل کے 6 افسران اور دیگر کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔افسران نے پیر کو بتایا کہ آرمی ایئر ڈیفنس کور کا ایم سی ایس این اے بھگوان بھرتی گینگ کا مبینہ ماسٹر مائنڈ ہے اور اس کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔سی بی آئی نے بریگیڈیئر وی کے پروہت کی شکایت پر کارروائی کی ہے۔شکایت میں یہ الزام لگایا گیا کہ 28 فروری 2021 کو اطلاع ملی تھی کہ نئی دہلی کے بیس اسپتال میں عارضی طور پر مسترد ہونے والے امیدواروں کا جائزہ لینے کے لئے حاضر سروس اہلکار طبی معائنے میں کامیاب ہونے کے لئے رشوت لینے میں ملوث ہیں۔


اپنی رائے یہاں لکھیں