Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

سی ا ے اے ‘این آرسی ‘این پی آر کے خلاف ناندیڑمیں وکلاءکا مورچہ

ناندیڑ: 29جنوری(ورق تازہ نیوز)آج ناندیڑمیں وکلاءنے ڈسٹرکٹ کورٹ سے ضلع کلکٹردفتر تک مورچہ نکالا جس میں سی اے اے ‘این آر سی ‘ این آر پی جیسے قوانین کے خلاف نعرہ بازی کی اسکے بعد ضلع کلکٹردفتر پہنچ کر صدر جمہوریہ ہند کے میمورنڈم روانہ کرکے ان قوانین کو منسوخ کرنے کامطالبہ کیا۔
اس موقع پر سینئر ایڈوکیٹ ایم ۔زیڈ۔صدیقی‘ عبدالرحمن صدیقی ‘ایڈوکیٹ عبدالباری صدیقی ‘ایڈوکیٹ محمدشاہد ‘ایڈوکیٹ جگجیون بھیڈے ‘ایڈوکیٹ پی این شندے ‘ایڈوکیٹ آئی سی جوندھلے ‘ایڈوکیٹ پی ایچ رتن ‘ایڈوکیٹ محمد منیر الدین ‘کے علاوہ سینکڑوں کی تعداد میں وکلاءموجود تھے ۔

ناندیڑ:”حجاب“ اعلیٰ تعلیم کے حصول میں روکاٹ نہیں :جج اُمامہ العمودی
ناندیڑ: 29جنوری(ورق تازہ نیوز) مورخہ 25 جنوری کو شہر کے معروف تعلیمی ادارے ”وسنت راﺅ کالے“ سینئر کالج میں جما عت اسلامی نا ندیڑ کے شعبہ تعلیم کے تعاون و اشتراک سے کیرئر گائیڈنس کے پروگرام کا انعقاد عمل میں لا یا گیا۔ اس جلسہ میں مہمان خصوصی اور کا میاب رہبر کے طور پر جوڈیشیل مجسٹریٹ(جج) محتر مہ اُمامہ العمودی بنت شیخ مزمل العمودی کو مدعو تھیں ۔

موصوفہ ایم پی ایس سی کی جا نب منعقدہ جوڈیشیل مجسٹریٹ(جج) کا امتحان میں امتیازی نشانات سے کا میا بی حا صل کر بطور جج منتخب ہو ئیں۔جلسہ کی صدارت پر ادارہ ھٰذا کے سربراہ جناب محمد مظہرالدین صا حب نے کی۔ نیز دیگر مہمانان میں جما عت اسلا می نا ندیڑ شعبہ تعلیم کے ذمہ ار جناب عبدالرحیم سر،جما عت اسلامی ناندیڑرابطہ عامہ کے ذمہ دار جناب فا روق شبیبی صا حب، قا ضی شہر جناب قا ضی سلیم الدین صاحب و شہر کے معزّز وکیل جناب شیخ مز مل العمودی مو جو د تھے۔ جلسہ کا آغا ز تلاوت کلام پا ک سے ہوا۔ اُسکے بعد جناب عبدالرحیم نے جماعت سلا می ہند کے شعبہ تعلیم کی اہمیت و افا دیت پر رو شنی ڈا لی۔ محترمہ اُمامہ العمو دی اپنی تقریرمیں شعبہ قا نون کی اہمیت و افادیت سے طلبہ و طا لبات کوواقف کروایااور شعبہ قا نون کی تعلیم پر روز دینے کی اپیل کر تے ہو ئے بتا یا کے ایم پی ایس سی امتحان میں کا میا بی کے لئے انتھک محنت کی ضرورت درکار ہے۔ امتحان کے مختلف مرا حل پر سرِحاصل تبصرہ کر تے ہو ئے بتا یا کے مصمّم عزا ئم سے کامیابی مل سکتی ہے ۔انھوں نے طلبہ اور طا لبات کے پو چھے گئے سوالات کے تشفی بخش جوابات دیتے ہوئے واضح کیا کہ حجاب کبھی بھی دختران ملت کے لئے اعلیٰ تعلیم کے حصو ل کے لئے روکاٹ نہیں بن سکتا۔ ایڈو کیٹ مز مل العمودی نے بتا یا کے قوم نے ڈا کٹر اور انجینئر تو بہت تیار کر لیئے، اب اپنے حقوق کی لڑا ئی کے لئے قوم کو ہو نہار وکلاءاور ججس کی ضرورت ہے۔ جناب مظہر الدین نے اپنے صدا رتی خطبہ میں تعلیم کے سا تھ سا تھ اخلاق کے حصّول پر بھی زور دیا۔ طا لب علم دین کی اتباع و اطا عت رسول ﷺکے ذریعہ ہی زندگی کے ہر شعبہ میں کامیاب ہوسکتے ہیں۔۔ فا روق شبیبی کے شکریہ پرپروگرام کا اختتام عمل میں آیا۔