نئی دہلی : یوپی ایس سی سیول سرویس کے زائد از 10,000 خواہشمندوں کو آج جھٹکا لگا جب سپریم کورٹ نے ان امیدواروں کیلئے اضافی موقع (کوشش) کی استدعا کرنے والی عرضی کو خارج کردیا جن کے مواقع 2020ء کے پریلیمنری ایگزام میں ختم ہوگئے جبکہ وہ کوویڈ۔19 کی وبا کا دور تھا اور یہ امیدوار مستقبل کے امتحانات میں شرکت کے معاملہ میں عمر کی حد سے آگے بڑھ چکے ہیں۔ جسٹس اے ایم کھانولکر، جسٹس اندو ملہوترہ اور جسٹس اجے رستوگی کی بنچ نے سیول سرویس کے خواہشمندوں کی داخل کردہ پٹیشن کو خارج کرتے ہوئے وضاحت کی کہ عدالت کا فیصلہ مرکزی حکومت کو اپنے اختیار تمیزی کا استعمال کرنے میں مانع نہیں ہوگا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں